وہوا، ہمسایوں نے نوجوان مارڈالا، غیرت کے نام پرشادی شدہ خاتون قتل

  وہوا، ہمسایوں نے نوجوان مارڈالا، غیرت کے نام پرشادی شدہ خاتون قتل

  

لودھراں، وہوا، مظفرگڑھ، جتوئی، چوک پرمٹ(نمائندہ پاکستان، نامہ نگار) پسند کی شادی کرنے کا رنج پر لڑکی کے والد نے بیٹی اور داماد کو گھر بلوا کر بیٹی کو کمرے (بقیہ نمبر40صفحہ6پر)

میں بند کر کے ساتھیوں کی مدد سے کلہاڑی کے وار کر کے داماد کو بیدردی سے قتل کر دیا پولیس تھانہ صدر لودھراں ایک ماہ گزرنے کے باوجود ملزمان کو گرفتار نہیں کر سکی۔تفصیل کے مطابق منگل کے روز موضع لالے والا کے رہائشی محمد ارشد ولد احمد شیر نے اپنے دیگر رشتہ داروں اور مقتول شاھد کی اہلیہ صائمہ بی بی کے ہمراہ ڈی پی او آفس اور پریس کلب کے باہر احتجاجی مظاہرہ کرتے ہوئے صائمہ بی بی نے بتایا کہ میں نے چار ماہ قبل موضع لالے والا کے رہائشی شاہد سے پسند کی شادی کی تھی۔ جس پر میرا سوتیلا والد صاحب یار بلوچ شدید ناراض تھا۔ جس نے 18 مئی کو مجھے اور میرے خاوند کو صلح کے بہانے سے گھر چک نمبر 95 ایم بلوایا. ہم دونوں میاں بیوی اعتماد کرتے ہوئے چلے گئے جہاں میرے سوتیلے والد نے دیگر ساتھیوں کی مدد سے مجھے زبردستی ایک کمرے میں بند کر دیا اور میرے شوہر شاہد کو کلہاڑیوں کے وار کر کے بے دردی سے قتل کر دیا۔ مقتول محمد شاہد کے بھائی محمد ارشد نے بتایا کہ پولیس نے میرے بیان پر میرے بھائی کے قتل کا مقدمہ نمبر 275/20 بجرم 302/148/149 درج کرلیا. لیکن ایک ماہ گزرنے کے باوجود ملزمان کو گرفتار نہیں کیاجارہا مظاہرین نے احتجاجی کتبے بھی اٹھا رکھے تھے۔ جن پر مختلف نعرے درج تھے اور ا نہوں نے وزیر اعلیٰ پنجاب۔ آئی جی پنجاب پولیس سے مطالبہ کیا کہ ملزمان کو فوری گرفتار کیا جائے۔ چار بھائیوں نے چھریوں کے پے در پے وار کرکے نوجوان ہمسایہ قتل کر ڈالا، پولیس تھانہ وہوا نے مدعی کی رپورٹ پر مقدمہ درج کرلیا پولیس رپورٹ کے مطابق مدعی اللہ وسایا قوم چانڈیہ سکنہ وہوا نے بتایا کہ اس کے 27 سالہ بیٹے عبدالرشید کا اپنے ہمسائے راشد اعوان ولد فیض محمد اعوان کے ساتھ معمولی تنازعہ چلا آرہا تھا جس کی رنجش میں گزشتہ شب راشد اعوان اپنے دیگر تین بھائیوں ارشام، آفاق اور ثناء اللہ کے ہمراہ ہمارے ڈیرے پر آدھمکا اور چاروں بھائیوں نے چھروں کے پے در پے وار کرکے میرے بیٹے عبدالرشید کو شدید زخمی کردیا اور دھمکیاں دیتے ہوئے فرار ہوگئے بعدازاں عبدالرشید شدید زخموں کی تاب نہ لاتے ہوئے جاں بحق ہوگیا پولیس تھانہ وہوا نے مدعی کی رپورٹ پر چار ملزمان راشد، ارشام، آفاق اور ثناء اللہ کے خلاف زیر دفعہ 302 مقدمہ درج کرکے مزید تفتیش شروع کردی ہے جبکہ مقتول عبدالرشید کی نماز جنازہ بی ایم پی پوسٹ گراوْنڈ میں ادا کی گئی جس میں شہریوں نے کثیر تعداد میں شرکت کی۔غیرت کے نام پر بھائی نے شادی شدہ بہن کو قتل کر دیا, پولیس نے قانونی کارروائی کرتے ہوئے ملزم کو گرفتار کر لیا تفصیل کے مطابق نواحی موضع جھگی والا میں بھائی نے بہن کو غیرت کے نام پر قتل کر دیا, اطلاعات کے مطابق صفیہ مائی کھیتوں میں گھاس کاٹ رہی تھی کہ اسکا بھائی فیاض حسین ولد احمد بخش سونترہ نے کلہاڑی کے وار سے بہن کو قتل کر دیا فیاض حسین کو شک تھا کہ اسکی بہن کے مبینہ طور پر کسی شخص سے تعلقات ہیں جس کا اسے رنج تھا پولیس تھانہ جتوئی نے فوری کارروائی کرتے ہوئے ملزم کو اپنی تحویل میں لے کر قانونی کارروائی شروع کر دی ہے۔

قتل

مزید :

ملتان صفحہ آخر -