نئے بجٹ کا اعلان، ضلعی انتظامیہ متحرک، نشتر ٹو منصوبے پر فوکس کرنیکا فیصلہ، اہم امور طے

    نئے بجٹ کا اعلان، ضلعی انتظامیہ متحرک، نشتر ٹو منصوبے پر فوکس کرنیکا ...

  

ملتان(نمائندہ خصوصی) حکومت پنجاب نے صحت کے شعبے میں جاری ترقیاتی منصوبوں پر کام تیز کرنے کا فیصلہ کیا ہے اورنئے بجٹ کے اعلان کے ساتھ ہی انتظامیہ کے افسران،صحت اور انجینئرنگ کے شعبے متحرک ہو گئے ہیں،اس سلسلہ میں گزشتہ روزڈپٹی کمشنر عامر خٹک سے پرووائس چانسلر نشتر میڈیکل یونیورسٹی پروفیسر ڈاکٹر احمداعجاز مسعود نے ملاقات کی،اس موقع پرانفراسٹرکچر ڈویلپمنٹ اتھارٹی(بقیہ نمبر21صفحہ6پر)

کے نمائندے بھی موجود تھے۔ملاقات میں میگا پراجیکٹ نشترٹو اور نشتر ہسپتال میں کینسر سنٹر اور فارمیسی بلاک کے منصوبوں پر پیش رفت کا جائزہ بھی لیا گیا۔اس موقع پر ڈپٹی کمشنر عامر خٹک نے کہا کہ نشتر ٹو کا منصوبہ صحت کے شعبے میں جنوبی پنجاب کا سب بڑا پراجیکٹ ہے،اس منصوبے کی بلڈنگ اور مشینری پر تقریباً 10ارب روپے لاگت آئے گی جب کہ منصوبے کے بلڈنگ سٹرکچر پر 4ارب90 کروڑ روپے خرچ ہونگے،ڈپٹی کمشنر نے کہا کہ نشتر ٹو پراجیکٹ پر83کروڑ34 لاکھ روپے خرچ کئے جا چکے ہیں،نئے بجٹ میں نشترٹو کے لئے1 ارب روپے مختص کئے جارہے ہیں،نشترٹو پورے جنوبی کے عوام کو صحت کی سہولیات فراہم کرے گا،عامر خٹک نے کہا کہ کورونا وائرس کی وجہ سے صحت کے اداروں کو دباو کا سامنا ہے،حکومت مستقبل میں کسی بھی ناگہانی صورتحال سے نمٹنے کے لئے صحت کے شعبے کی استعداد بڑھانا چاہتی ہے،صحت کے شعبے میں پرائمری اور سیکنڈری سٹرکچر کو مضبوط بنانا وقت کی ضرورت ہے۔پرو وائس چانسلر نشتر میڈیکل یونیورسٹی ڈاکٹر احمد اعجاز مسعور نے اس موقع پر بریفنگ دیتے ہوئے بتایا کہ کینسر سنٹر کی تعمیر آخری مراحل میں ہے،کینسر سنٹر پر13 کروڑ90 لاکھ روپے لاگت آئی ہے،پرو وائس چانسلر نے بتایا کہ نشتر ہسپتال کے فارمیسی بلاک پر کام جاری ہے،چار منزلہ فارمیسی بلاک پر39 کروڑ60 لاکھ روپے خرچ کئے جارہے ہیں،فارمیسی بلاک ساڑھے چھ کنال رقبہ پر تعمیر کیا جارہا ہے،فارمیسی بلاک کی تعمیر کا پہلا فلور مکمل ہو چکا ہے جب کہ فارمیسی بلاک مشینری کے لئے بھی ویئر ہاوس کا کام بھی دے گا،پرووائس چانسلر نے بتایا کہ نشتر ہسپتال کئی عشروں سے فارمیسی بلاک اور ویئر ہاوس سے محروم چلا آرہا تھا۔

مزید :

ملتان صفحہ آخر -