سیکرٹریٹ نامنظور، جنوبی پنجاب صوبہ وقت کی ا ہم ضرورت، مرتضی محمود

      سیکرٹریٹ نامنظور، جنوبی پنجاب صوبہ وقت کی ا ہم ضرورت، مرتضی محمود

  

صادق آباد(نامہ نگار)جنوبی پنجاب صوبے کا قیام وقت کی اہم ضرور ت سیکرٹریٹ سے کام نہیں چلے گا حکومت عوام کے معیار زندگی کو بہتر بنانے کی بجائے مالی معاشی (بقیہ نمبر16صفحہ6پر)

بحران کا شکار کررہی ہے موجودہ حکومت نے بجٹ 2020-21پیش کر کے آئی ایم ایف کو راضی کرنے کی کوشش کی گئی بجٹ میں سرکاری ملازمین کی تنخواہوں میں نہ تو اضافہ کیا گیا اور نہ ہی کسانوں کو ریلیف دیا گیا پیپلزپارٹی پیش کئے جانیو الے بجٹ کو مکمل طور پر مسترد کرتی ہے۔پاکستان پیپلزپارٹی جنوبی پنجاب صوبہ کے قیام کے لئے ہر ممکن کردار ادا کرتی رہے گی ان خیالات کا اظہار پاکستان پیپلزپارٹی کے رہنماؤں ارکین قومی و صوبائی اسمبلی مخدوم سید مرتضیٰ محمود ممتاز خان چانگ رئیس نبیل احمد،ملک احمد علی بھٹو،عثمان محموداور سابق ٹکٹ ہولڈر رانا طارق محمود خان نے کیا تمام رہنماؤں نے کہاکہ بجٹ میں غریب طبقہ کو معاشی بحران کا شکار کیا گیا ہے پنجاب کی معشیت مکمل طور پر تباہ ہو چکی ہے جب کہ جنوبی پنجاب کے عوام تمام بنیادی سہولیات سے محروم ہیں حکومت کورونا وائرس سے متاثرہ افراد کی بحالی کے اقدامات کے بلند و بانگ دعوے کر کے مستقبل کی سیاست میں اپنا گراف مضبوط کرنا چاہتی ہے۔پیپلزپارٹی حکومت کے تمام غیر آئینی اور غیر جمہوری اقدامات کی بھرپور مذمت کرتی رہے گی چیئرمین بلاول بھٹو زرداری پاکستان کے بہتر اور روشن مستقبل کی ضمانت ہے۔

مرتضیٰ محمود

مزید :

ملتان صفحہ آخر -