اپنے مفاد کے لیے سب ایک ہوگئے،سینیٹ کمیٹی نے ارکان اسمبلی کے خاندان والوں کیلئے مراعات کی منظوری دے دی،انتہائی شرمناک خبرآگئی

اپنے مفاد کے لیے سب ایک ہوگئے،سینیٹ کمیٹی نے ارکان اسمبلی کے خاندان والوں ...
اپنے مفاد کے لیے سب ایک ہوگئے،سینیٹ کمیٹی نے ارکان اسمبلی کے خاندان والوں کیلئے مراعات کی منظوری دے دی،انتہائی شرمناک خبرآگئی

  

اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن) سینیٹ کمیٹی برائے خزانہ اور ریونیو نے متفقہ طور پر ارکان اسمبلی کے اہلخانہ کو مراعات دینے کے بل کی منظوری دے دی ہے۔

اس بل کے تحت تمام ارکان اسمبلی کو  تین لاکھ کے سفری الاونس کے ساتھ ہوائی جہاز کی بزنس کلاس کے 25ریٹرن ٹکٹ حاصل کرنے کی    سہولت ہوگی جو ان کے اہلخانہ بھی استعمال کرسکیں گے۔

سینیٹر فاروق حمید نائیک کی سربراہی میں کمیٹی نے ممبرز آف پارلیمنٹ (سیلریز اینڈ الاونسز)ترمیمی بل 2020کی منظوری دی۔

اس حوالے سے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے حمید نائیک نے کہا کہ اس ترمیم سے قومی خزانے پر کوئی اضافی بوجھ نہیں پڑا بلکہ صرف ٹکٹ کے استعمال کے طریقہ کار کو بدلا گیاہے۔ انہوں نے یہ بھی کہا کہ ایوان بالا کے تمام ارکان امیر نہیں ہیں۔

اس حوالے سے وضاحت کرتے ہوئے  پارلیمانی امور ڈویژن کا کہنا ہے کہ ممبرزآف پارلیمنٹ(سیلری اینڈ الاونسز) ایکٹ 1974کا سیکشن 10اراکین اسمبلی کو ایک سال میں بزنس کلاس کے 25 اوپن ریٹرن فضائی ٹکٹ فراہم کرتا ہے۔ یہ ٹکٹ حلقے کے قریب ترین ایئرپورٹس سے اسلام آباد کے سفر کے لیے استعمال ہوتے ہیں۔

تین لاکھ کے سفری وواچرز فضائی سفر کے علاوہ ٹرین  پر بھی سفر کے لیے استعمال کیے جاسکتے ہیں جو کہ نہ صرف رکن اسمبلی بلکہ ان کے اہلخانہ بھی استعمال کرسکتے ہیں۔ پارلیمانی امور ڈویژن کا کہنا ہے کہ ارکان اسمبلی کی جانب سے پرزور اصرار کیا جارہا تھا کہ ان کے فضائی ٹکٹس کو ان کے اہلخانہ کو بھی استعمال کرنے کی اجازت دی جائے۔

بل کے مسودے کے مطابق ارکان پارلیمنٹ کو 25 بزنس کلاس ایئر ٹکٹس کے برابر سفری ووچرز دیے جائیں گے۔ ارکان اور ان کے اہل خانہ اپنے متعلقہ ایئرپورٹ سے قابل اطلاق ایئرلائن اور روٹس پر یہ واؤچر استعمال کر سکیں گے۔  

سینیٹ میں ارکان پارلیمنٹ کی تنخواہوں اور الاؤنسز میں ترمیم کا بل وزیر اعظم کے مشیر برائے پارلیمانی امور بابر اعوان نے پیش کیاتھا۔

بل کے اغراض و مقاصد میں کہا گیا کہ قواعد کے تحت ارکان پارلیمنٹ اسلام آباد سفر کے لیے ہر سال 25 بزنس کلاس اوپن ریٹرن ٹکٹ کے مستحق ہیں۔ ارکان کا مطالبہ تھا کہ 25 ٹکٹس کے استعمال کا حق ان کے خاندان کے افراد کو بھی دیا جائے 25 ایئر ٹکٹس کی جگہ برابر مالیت کے واؤچرز ارکان کو دینے کی تجویز ہے۔ یہ ووچرز ارکان پارلیمنٹ کے خاندان کے ارکان بھی استعمال کر سکیں گے۔ 

مزید :

قومی -