جسٹس قاضی فائز عیسیٰ نے سپریم کورٹ میں عمران خان کی جن 6 جائیدادوں کا ذکر کیا ان کا مالک دراصل کون سا عمران خان ہے؟ حیران کن انکشاف

جسٹس قاضی فائز عیسیٰ نے سپریم کورٹ میں عمران خان کی جن 6 جائیدادوں کا ذکر کیا ...
جسٹس قاضی فائز عیسیٰ نے سپریم کورٹ میں عمران خان کی جن 6 جائیدادوں کا ذکر کیا ان کا مالک دراصل کون سا عمران خان ہے؟ حیران کن انکشاف

  

لندن (ڈیلی پاکستان آن لائن) سپریم کورٹ کے جسٹس قاضی فائز عیسیٰ نے بدھ کے روز سپریم کورٹ میں وزیر اعظم عمران خان کی برطانیہ میں 6 جائیدادوں کی بات کی لیکن اب انکشاف ہوا ہے کہ یہ جائیدادیں وزیر اعظم عمران خان کی نہیں بلکہ کسی اور عمران خان کی ہیں ۔

برطانیہ میں مقیم پاکستانی صحافی اظہر جاوید نے اس حوالے سے ایک ٹویٹ میں وضاحت کی ہے۔ انہوں نے کہا ہے کہ " جسٹس قاضی فائز عیسی نے برطانیہ میں جس عمران خان نیازی کی چھ جائیدادوں کا ذکر کیا وہ وزیراعظم پاکستان نہیں یہ نیازی صاحب چالیس سال سے کم عمر کے نوجوان ہیں جو ایک کاروباری شخصیت ہیں۔"

انہوں نے اپنے ٹویٹ میں برطانیہ میں جائیدادوں کی معلومات کیلئے بنائی گئی ویب سائٹ "192.com" کا سکرین شاٹ بھی شیئر کیا ، جس سے واضح ہوتا ہے کہ جسٹس فائز عیسیٰ نے جس عمران خان کا ذکر کیا ہے اس کی عمر 35 سے 39سال کے درمیان ہے جبکہ وزیر اعظم عمران خان  کی عمر 60 سال سے زائد ہے۔

خیال رہے کہ جسٹس قاضی فائز عیسیٰ نے بدھ کے روز سپریم کورٹ کو بتایا تھا کہ انہیں شہزاد اکبر کے اس دعوے کہ برطانیہ میں کسی کی بھی جائیداد سرچ انجن 192.کام کے ذریعے تلاش کی جاسکتی ہیں سے ایک اشارہ ملا۔

انہوں نے بتایا کہ انہوں نے سرچ انجن کو کچھ معروف شخصیات کی جائیدادیں تلاش کرنے کے لیے استعمال کیا گیاجس کے تنائج کے مطابق برطانیہ میں عمران خان کی جائیدادیں 6، شہزاد اکبر کی 5 ، سابق معاون خصوصی فردوس عاشق اعوان کی ایک، ذوالفقار بخاری کی 7، عثمان ڈار کی 3، جہانگیر ترین کی ایک اور پرویز مشرف کی 2 جائیدادیں ہیں۔

مزید :

قومی -