مونس الٰہی کیخلاف منی لانڈرنگ کیس میں شریک ملزم کی عبوری ضمانت منظور 

مونس الٰہی کیخلاف منی لانڈرنگ کیس میں شریک ملزم کی عبوری ضمانت منظور 

  

لاہور(نامہ نگار)بینکنگ کورٹ (ایف آئی اے)نے سپیکر پنجاب اسمبلی چودھری پرویز الہٰی کے صاحبزادے مونس الٰہی کے خلاف 24 ارب روپے کی منی لانڈرنگ کیس میں شریک ملزم واجد بھٹی کی عبوری ضمانت 22 جون تک منظور کرتے ہوئے اسے گرفتار کرنے سے روک دیا عدالت نے ملزم کو 5لاکھ روپے کے ضمانتی مچلکے جمع کروانے کی ہدایت بھی کی ہے،عدالت نے 22 جون کو ایف آئی اے سے رپورٹ بھی طلب کر لی ملزم واجد بھٹی کی جانب سے موقف اختیار کیا گیا کہ منی لانڈرنگ سے کوئی تعلق نہیں سیاسی بنیادوں پر مقدمہ درج کیا گیا ہے، شامل تفتیش ہو کر بے گناہی ثابت کرناچاہتا ہوں تاہم خدشہ ہے ایف آئی اے گرفتار کر لے گا، عدالت سے استدعاہے کہ اس کی عبوری ضمانت منظور کی جائے۔دوسری جانب ضلع کچہری کے جوڈیشل مجسٹریٹ غلام مرتضیٰ ورک نے مونس الٰہی کے خلاف اربوں روپے کی منی لانڈرنگ کے مقدمہ میں شریک ملزموں نواز بھٹی اور مظہر عباس کو 4 روزہ جسمانی ریمانڈ پر ایف آئی اے کے حوالے کردیا ایف آئی اے کے پراسکیوٹر منعم بشیر چوہدری عدالت میں پیش ہوئے،سرکاری وکیل نے عدالت کوبتایا کہ ملزمان کے خلاف منی لانڈرنگ کا مقدمہ درج ہے۔

عدالت سے استدعاہے کہ ملزمان سے تفتیش کے لئے جسمانی ریمانڈ منظور کیا جائے،عدالت نے استدعا منظور کرتے ہوئے دونوں ملزموں کو4روزہ جسمانی ریماند پر پولیس کے حوالے کرنے کاحکم دے دیا۔

مزید :

علاقائی -