پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں اضافہ افسوسناک‘ غضفر بلور

  پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں اضافہ افسوسناک‘ غضفر بلور

  

پشاور(سٹی رپورٹر)فیڈر یشن آف پا کستا ن چیمبرز ا ف کا مرس اینڈ انڈسٹری کے سا بق صدراور بز نس مین فور م کے لیڈر غضنفر بلورملک کی موجو دہ ابتر معا شی صور تحا ل اور بجلی وگیس کے بحران سمیت پٹرولیم مصنو عات کی قیمتو ں مین ایک ما ہ کے دوران 84روپے تک اضا فے پر گہری تشویش کا اظہار کیا اور معا شی ابتر صور تحا ل کے با عث انڈسٹرئزیلشن کا عمل مکمل طور پر رک گیا ہے اور کار وبار ی سر گر میا ں بر ی طر ح متا ثر ہو رہی ہیں ایک بیان میں ملک کے ممتا ز صنعت کارغضنفر بلورنے کہا ہے کہ پٹر ولیم مصنو عا ت کی قیمتوں میں بتدر یج اضا فہ، پا کستا نی روپیہ کی ڈالر کے مقا بلے میں تیز ی سے بے قدر ی، تجا رتی خسار ہ، گر دشی قر ضو ں میں اضا فہ، بجلی وگیس کا بحر ان کیو جہ سے ملکی معیشت کو تبا ہی کے دہانے پر پہنچ دیاگیا ہے۔انھو ن نے کہا صنعتی تر قی کے عمل کو بر ی طر ح متا ثر ہو رہا ہے جبکہ ملکی بر ا مدات اور درآمدات میں بھی نما یا ں کمی ہو ئی ہے بز نس مین فور م کے لیڈر غضنفر بلورنے مزید کہا ملک اس وقت غیر یقینی اور ہجا ن جیسی صو رت حا ل سے دوچار ہے حکمران کے پا س ملک بحر ان سے نکا لنے کے لئے و اضح حکمت عملی وپر وگر ام مو جو د نہیں ہے جس کے و جہ سے کاروباری سمیت ملک کا ہر طبقہ میں بے چینی اور اضطراب پا یاجا تا ہے۔ایف پی سی سی ا ئی کے سا بق صدرکا کہنا تھا کہ ملک بھر میں بڑھتی ہو ئی مہنگا ئی سے غریب آدمی کی جینا مشکل کر دیا ہے۔انھو ں نے اس با ت پر زور دیا ہے کہ ملک کو دیوا لیہ پن سے بچا نے کیلئے ا زادانہ معا شی پا لیسیو ں کو تشکیل دینے نا گر یز ہے اس حو الے سے ملک بھر کی بزنس کمیو نٹی سے مشاور ت کی جا ئے۔سابق صدر ایف پی سی سی ا ئی نے کہا ہے کہ مو جو ہ حکومت سے آئی ایم ا یف کی ا یما  پر ملکی معیشت کو داو پر لگاد یا ہے ملک میں صنعتی تر قی، کار وبا ری اور تجار تی سر گر میا ں انہتا ئی جمود کا شکار ہیں لیکن ا س کے با و جودکاروبار، صنعتی تر قی کے فروغ سمیت معیشت کاکو صحیح سمت کی طر ف لانے کے لئے کو ئی سنجید ہ اقد امات نہیں کئے جا رہے ہیں انھو ں نے کہا بجلی و گیس کی عد م دستیا بی کی وجہ سے خیبر پختو نخوا اور پشاور میں صنعتی ترقی کا عمل ر ک گیا ہے جس کے با عث بے روز گار ی میں تیز ی سے ا ضا فہ ہو ر ہا ہے۔ ایف پی سی سی ا ئی کے سا بق صدر کا کہنا تھا کہ ملک بھر کے کسی بھی چیمبر کی سفا ر شات و تجا و یز میں ا ئند ہ ما لیا تی بجٹ 2022-23 میں شا مل نہیں کی گئی ہیں جو کہ مو جو دہ حکو مت کی جا نب سے کار وبا ری طبقہ کی مشکلات کو حل کر نے میں غیر سنجید گی کے متر دا ف ہے انھو ں نے تجویز پیش کی اگر حکمر ان ملکی معیشت کو در ست سمت کی جا نب لے جا نے چا ہتے ہیں ہے تو وہ بزنس کمیونٹی کی مشاور ت کے معاشی پالیسیو ں کو تشکیل دے اور بیر ونی ما لیاتی اداروں کی اشاروں پر ملک کو دیو الیہ پن کی جا نب لے جا نے سے گر یز کر یں۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -