پاکستان کے اراکین پارلیمنٹ کے ذاتی اثاثوں میں کئی گنا اضافہ، نورعالم امیر ترین پارلیمنٹیرین بن گئے

پاکستان کے اراکین پارلیمنٹ کے ذاتی اثاثوں میں کئی گنا اضافہ، نورعالم امیر ...
پاکستان کے اراکین پارلیمنٹ کے ذاتی اثاثوں میں کئی گنا اضافہ، نورعالم امیر ترین پارلیمنٹیرین بن گئے

  



لاہور(مانیٹرنگ ڈیسک) اراکین پارلیمنٹ کے ذاتی اثاثوں نے دن دوگنی رات چوگنی ترقی کی اور دستاویزات کے مطابق پاکستان پیپلزپارٹی کے نورعالم بتیس ارب روپے کیساتھ امیر ترین رکن پارلیمنٹ بن گئے ۔ مقامی میڈیا کے مطابق نورعالم نے 2008ءمیں 5 کروڑ 58 لاکھ 50 ہزار روپے کے اثاثے ڈکلیئر کیے تاہم اس وقت 32 ارب روپے کیساتھ وہ پاکستان کے امیر ترین رکن پارلیمنٹ بن چکے ہیں۔ پیپلزپارٹی کے ہی طارق خٹک کے اثاثے 2011ءمیں ٓآٹھ ارب تک چا پہنچے۔ مسلم لیگ ن کے شاہد خاقان عباسی کے اثاثوں میں 2008 ءسے 2011ءتک ایک ارب50 کروڑ روپے کا اضافہ ہواجبکہ پیپلزپارٹی کے ارباب عالمگیر ایک ارب 50 کروڑ روپے کے اثاثوں کے مالک ہو گئے۔پیپلزپارٹی کے معظم علی خان جتوئی کے اثاثے 3 کروڑ 45 لاکھ سے 5 کروڑ روپے ہو گئے۔ مسلم لیگ ن کے حمزہ شہباز کے اثاثوں میں 4 برس میں 64 کروڑ روپے کا اضافہ ہوا۔ آزاد امیدوار نورالحق قادری کے اثاثے 42 کروڑ50 لاکھ روپے تک جا پہنچے۔ایکسپریس نیوز کے مطابق اے این پی کے استقبال خان نے 2008ءمیں اپنے اثاثے الیکشن کمیشن میں جمع نہیں کرائے تھے تاہم 2011ءمیں ان کے ظاہر کیے گئے اثاثوں کی مالیت 39 کروڑ 58 لاکھ روپے ہے۔ فنکشل لیگ کے پیر سید صدرالدین شاہ راشدی کے اثاثوں کی مالیت ایک ارب 4 کروڑ 79 لاکھ جبکہ ق لیگ سے مسلم لیگ ن میں شمولیت اختیار کرنے والے امیر مقام کے 2008ءمیں اثاثے 64 لاکھ 25 ہزار تھے جبکہ 2011ءمیں اُنہوں نے اپنے اثاثے 33 کروڑ 44 لاکھ روپے ظاہر کیے ہیں۔

مزید : بزنس