ڈیرہ ‘ قتل کے مقدمہ میں ملزم کی سزائے موت بحال رکھنے کا حکم

ڈیرہ ‘ قتل کے مقدمہ میں ملزم کی سزائے موت بحال رکھنے کا حکم

ڈیرہ غازیخان (نمائندہ خصوسی) ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن جج میاں محمد اقبال بھٹی نے تھانہ کوٹ مبارک کے قتل کے مقدمہ کا فیصلہ سناتے ھوئے مجرم محمد نواز کی سزائے موت کی سزا کو(بقیہ نمبر39صفحہ12پر )

بحال رکھنے کا فیصلہ سنا دیااستغاثہ کے مطابق 2016 میں قادر بخش نے تھانہ کوٹ مبارک میں درخواست دیتے ھوئے موقف اختیار کیا تھا کہ مقتول نذر حسین کے گھر چوری ھوئی جس کا کھرا ملزم محمد نواز کے گھر تک گیا اس رنجش کی بنا پر محمد نواز نے طعیش میں آکر نذر حسین کو قتل کر دیا پولیس نے ملزم کے خلاف بجرم 302/109, 324/34 مقدمہ نمبر 166/16 درج کرتے ھوئے اسے گرفتار کرکے چالان مکمل کرکے ایڈنشنل سیشن جج ماجد کریم فاروق کی عدالت میں پیش کیا فاضل جج نے مقدمہ کی سماعت کرتے ھوئے جرم ثابت ھونے پر ملزم محمد نواز کو سزائے موت، دولاکھ جرمانہ، عدم آدائیگی جرمانہ 6ماہ قید کی سزا کا حکم سنایا جس پر لاھور ھائی کورٹ ملتان بنچ کے جسٹس سردار احمد نعیم کی عدالت میں قتل کی اپیل پر عدالت نے 19دسمبر 2018 کو غلام حسن کی بربریت پر سیشن جج کو فیصلہ واپس کیا جس کی سماعت کرنے کے بعد ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن جج میاں محمد اقبال بھٹی نے گزشتہ روز فیصلہ سناتے ھوئے مجرم محمد نواز کی سزائے موت کی سزا کو بحال رکھنے کا حکم سنا دیا ھے۔

سزائے موت

مزید : ملتان صفحہ آخر