حضرت سخی سرور کے عرس کی تقریبات کا آغاز ‘ سکیورٹی پلان طلب

حضرت سخی سرور کے عرس کی تقریبات کا آغاز ‘ سکیورٹی پلان طلب

  

ڈیرہ غازیخان (نمائندہ خصوسی ).برصغیر کے روحانی پیشوا حضرت سخی سلطان المعروف سخی سرور ؒ کے عرس کی تقریبات کا آغاز کردیاگیاہے 31مارچ تک جاری رہنے والی تقریبات کے دوران زائرین کی سکیورٹی اور سہولیات کی فراہمی کیلئے متعلقہ محکموں کو انتظامات مکمل کر کے پلان طلب کرلیاگیا(بقیہ نمبر14صفحہ12پر )

ہے . عرس کے دوران غیر اخلاقی و غیر قانونی سرگرمیوں پر عائد پابندی کی خلاف ورزی پر قانون کے تحت نمٹا جائے گا . اس بات کا فیصلہ ڈپٹی کمشنر آفس ڈیرہ غازیخان میں منعقدہ اجلاس میں کیاگیا . اجلاس میں ڈپٹی کمشنر میاں محمد اقبال مظہر مہار او رایم پی اے سردار احمد علی دریشک کے علاوہ متعلقہ محکموں کے افسران شریک تھے . رکن صوبائی اسمبلی سردار احمد علی دریشک نے کہاکہ عرس کے دوران سکیورٹی اور سہولیات کیلئے بہتر انتظامات کیے جائیں . محکمہ اوقاف سکیورٹی کیمروں اور عطیات کاباقاعدہ ریکارڈ مرتب کرے . زائرین نذرانے اور عطیات باکس میں ڈالیں.میڈیکل کیمپ کے دوران ڈاکٹرز ، پیرا میڈیکل سٹاف اور ادویات کی موجودگی یقینی بنائی جائے اور بہتر پارکنگ کاانتظام کیا جائے . عادی اور پیشہ ور بھکاریوں کی حوصلہ شکنی کی جائے . ڈپٹی کمشنر نے کہا کہ حضرت سخی سرور ؒ کے عرس کے دوران خود کش حملے کاناخوشگوار واقعہ پہلے ہی رونماہو چکا ہے اس لیے پنجاب پولیس ، بی ایم پی ، سول ڈیفنس اور دیگر محکمے 24گھنٹے چوکس رہیں.زائرین کیلئے دربار صبح چھ سے شام چھ بجے تک کھلا رکھاجائے گاتاہم دربار بند ہونے کے باوجود مزار کی سکیورٹی اور ہر سرگرمی کو مانیٹرکرنے کیلئے اقدامات کیے جائیں . سی سی ٹی وی کے کنٹرول روم میں 12گھنٹے کی بجائے آٹھ ، آٹھ گھنٹے کیلئے ڈیوٹی شفٹیں بنائی جائیں اور ماہر آپریٹر تعینات کر کے سرگرمیوں کو مانیٹر کیاجائے . سبیل اور لنگرکی چیکنگ ک ساتھ سکیورٹی گارڈز کو خصوصی کارڈ جاری کیے جائیں ڈپٹی کمشنر نے کہاکہ سول ہسپتال سخی سرور اور ٹیچنگ ہسپتال میں متعلقہ ڈاکٹرز اورضروری اویات کی موجودگی کے ساتھ وارڈ مخصوص کیے جائیں. عرس کے دوران ریسکیو 1122اور محکمہ صحت کے کیمپ اور ایمبولینسز موجود ہونی چاہئیں. سکیورٹی اداروں کے آپس میں بروقت رابطے کیلئے نظام متعارف کرایاجائے. اجلاس کو بتایاگیاکہ محکمہ اوقاف نے دربار کے ملحقہ علاقوں میں خفیہ کیمرے نصب کر کے سسٹم اپ ٹو ڈیٹ کر دیا ہے . واک تھروگیٹس ، سرچ لائٹس ، یو پی ایس ،جنریٹر او رخاردار تاریں لگا دی گئی ہیں.دس خواتین سمیت 32سکیورٹی گارڈ زفرائض انجام دے رہے ہیں .سکیورٹی کیمروں کا 15دن کاریکارڈ مرتب کیاجائے گا. اجلاس میں ایس پی انوسٹی گیشن طاہر مصطفی ، اسسٹنٹ کمشنر ملک شاہد ، سول ڈیفنس آفیسر خالد کریم ، ڈپٹی ڈائریکٹر ڈویلپمنٹ وسیم اختر جتوئی ،رسالدار خرم کھوسہ ، زونل ایڈمنسٹریٹراوقاف شمس الحق ، منیجر اوقاف حفیظ احمد ، ایمرجنسی آفیسر ڈاکٹر حسین میاں اوردیگر افسران شریک تھے. اس مو قع پر ملک و قوم کی سلامتی اورا من وامان کیلئے دعا بھی کی گئی .

مزید :

ملتان صفحہ آخر -