عمران خان نے کالعدم تنظیموں کیساتھ ملکر الیکشن لڑا ،بلاول

عمران خان نے کالعدم تنظیموں کیساتھ ملکر الیکشن لڑا ،بلاول

کراچی ( سٹاف رپورٹر) چےئرمین پاکستان پیپلز پارٹی بلاول بھٹو زرداری نے کہا ہے کہ موجودہ حکومت سلیکٹڈ ہے پاکستان میں جمہوریت بحران کا شکار ہے عوام مہنگائی کے سونامی میں ڈوب رہے ہیں۔ وزیر اعظم عمران خان کالعدم تنظیموں اور مودی کے خلاف کچھ بول سکتے ہیں اور نہ ہی کچھ کہہ سکتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ ہمارے ملک سے 3مطالبات ہیں پہلایہ کہ پارلیمنٹ میں تمام جماعتوں کے ارکان پر مشتمل قومی سلامتی کمیٹی بنائی جائے، نیپ پر عمل ہو اور حکومت خود کو کالعدم تنظیموں سے الگ کرے ۔کراچی میں سندھ کونسل کے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے بلاول نے کہا کہ پاکستان میں جمہوریت بحران کا شکار ہے موجودہ حکومت عوام کی منتخب کردہ نہیں، سلیکٹڈ حکومت ہے ۔ پاکستان میں انسانی حقوق کا بھی بحران ہے لاپتہ افراد کا بہت بڑا مسئلہ ہے ۔ عوام مہنگائی کے سونامی میں ڈوب رہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ وفاقی حکومت سندھ کو اس کا مالی حصہ نہیں دے رہی ، سندھ کو اس کے حصے کا فنڈ ملے تو ہسپتال ، سکول ، کالجز کا نام ہو ۔ انہوں نے کہا کہ عمران خان انتخابی مہم کے دوران عوام کے ساتھ کھڑے نہیں تھے۔ انہوں نے کالعدم تنظیموں کے ساتھ ملکر الیکشن لڑا ، وزیر اعظم نریندر مودی اور کالعدم تنظیموں کے خلاف بول سکتے ہیں نہ ہی کچھ کہہ سکتے ہیں۔ ان کا کہنا تھا کہ وفاقی حکومت کے تین وزراء کا کالعدم تنظیموں سے گٹھ جوڑ ہے ۔ طالبان کو این آر او مل رہا ہے اور آپ آصف علی زرداری کو ایک کال پر سزا دلواتے ہیں۔ پاکستان کے تین بار منتخب ہونے والے وزیراعظم کو ان کی بیٹی کے ساتھ گرفتار کیا جاتا ہے ۔ آغا سراج درجانی سپیکر ہیں انہیں گرفتار کیا جاتا ہے۔ ان کے گھر میں چادر اور چار دیواری کو پامال کیا جاتا ہے۔ آپ کو کالعدم تنظیموں کے خلاف تو ایسے ایکشن نہیں لیتے ۔انہوں نے کہا کہ یہ لوگ سیاسی میدان میں ہمارا مقابلہ نہیں کرسکتے ۔ یہ تو مجھے اسمبلی میں بھی نہیں دیکھنا چاہتے تھے اور اسمبلی میں میرے آنے سے خوف زدہ تھے ۔ ہم خوب جانتے ہیں کہ لیاری اور مالا کنڈ میں ہمیں کیسے مروایا گیا۔ دوسری طرف پیپلزپارٹی کی مرکزی قیادت کی ممکنہ گرفتاری اورسندھ حکومت کی معاشی ناکہ بندی کے خلاف پیپلزپارٹی نے بلاول بھٹو کی قیادت میں رابطہ عوام مہم شروع کرنے کا اعلان کردیا ہے،بلاول بھٹو زرداری کراچی سے لاڑکانہ تک بذریعہ سڑک شہر،شہرگاؤں، گاؤں ریلیوں اورجلسوں سے خطاب کریں گے،اس بات کا فیصلہ پیپلزپارٹی کی سندھ کونسل کے وزیراعلی ہاؤس کے آڈیٹوریم میں منعقد ہونے والے اجلاس میں کیا گیا جس میں سانحہ نیوزی لینڈ پرتعزیتی قرارداد منظورکی گئی۔ اجلاس میں فیصلہ کیا گیا کہ پیپلزپارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری پیپلزپارٹی کے بانی اورسابق وزیراعظم ذوالفقار علی بھٹو کی برسی پر بذریعہ سڑک لاڑکانہ جائیں گے اوران کے سفرکورابطہ عوام مہم میں تبدیل کیا جائے گا بلاول بھٹو کراچی سے لاڑکانہ تک شہر ،شہر، گاؤں گاؤں عوامی اجتماعات سے خطاب کریں گے۔ اجلاس کے فیصلوں سے آگاہ کرتے ہوئے پیپلزپارٹی سندھ کے صدرنثارکھوڑو نے صحافیوں کوبتایا کہ سندھ کونسل نے شہید بھٹو کی چالیسویں برسی پرسیاسی طاقت کا مظاہرہ کرنے کا فیصلہ کیا ہے،چار اپریل سے پہلے بلاول کی قیادت میں بذریعہ سڑک عوامی رابطے پر نکلیں گیانہو نے کہاکہ ہماری قیادت ملک میں ہے اورہم گرفتاریوں سے نہیں ڈرتے ، اگر انہوں نے ٹھان لی ہے کہ گرفتارکرنا ہے تو ہم تیار ہیں۔

مزید : صفحہ اول