مسلمان مخالف آسٹریلیا کے سینیٹر کو نوجوان نے انڈہ دے مارا

مسلمان مخالف آسٹریلیا کے سینیٹر کو نوجوان نے انڈہ دے مارا

کینبرا(مانیٹرنگ ڈیسک)آسٹریلیا کے نسل پرست اور مسلمان مخالف سینیٹر فریسر ایننگ کی جانب سے نیوزی لینڈ میں مساجد پر ہونے والے دہشت گردی کے حملوں کا ذمہ دار پناہ گزینوں کو قرار دینے پر ایک نوجوان نے غصے میں آکر بطور احتجاج ان کے سر پر انڈہ دے مارا۔اس حوالے سے منظر عام پر آنے والی ایک ویڈیو میں دیکھا گیا کہ ایک سفید فام نوجوان اپنے موبائل سے ویڈیو بناتے ہوئے سینیٹر کے قریب آیا اور ان کے سر پر انڈہ دے مارا۔جس پر سینیٹر فوری طور پر مڑے اور لڑکے کو تھپڑ اور لاتوں سے مارنے لگے، جس پر آس پاس موجود لوگوں نے سینیٹر کو پکڑ کر قابو کیا۔جبکہ دیگر 2 افرد نے لڑکے کو بری طرح زدوکوب کر کے زمین پرپھینک دیا جسے بعد ازاں پولیس نے گرفتار کرلیا۔

مزید : صفحہ اول