خیبر ،ٹول ٹیکس کیخلاف مقامی افراد کا احتجاجی مظاہرہ

خیبر ،ٹول ٹیکس کیخلاف مقامی افراد کا احتجاجی مظاہرہ

ضلع خیبر (بیورورپورٹ)لنڈی کوتل میں پاک افغان شاہراہ پر مقامی لوگوں نے کٹہ کشتہ کے مقام پرقیام ٹول ٹیکس پلازہ کے خلاف احتجاجی مظاہرہ کیا اور پاک افغان شاہراہ ہر قسم کی آمدورفت کے لیے بند کر دیا گیا اس موقع پر مظاہرین کا کہنا تھا کہ فاٹا انضمام کیساتھ ہی قبائلی عوام کیساتھ وعدہ کیا گیا تھا کہ وہ پانچ سال کے لئے ٹیکس فری ہونگے لیکن این ایچ اے حکام نے کٹہ کشتہ کے مقام پر ٹول ٹیکس پلازہ لگا کر آئین کی خلاف ورزی کی ہے اور اسکی مزمت کرتے ہیں انہوں نے کہا کہ اگر ٹول پلازہ کو بند نہیں کیا گیا تو پاک افغان شاہراہ کو نہیں کھول دیا جائے گا، دوسری طرف این ایچ اے ٹول پلازہ کے آپریشن منیجر سرفراز نے کہا کہ یہ آئینی اور قانونی طور پر لگایا گیا ہے ٹیکس صرف افغان ٹرانزٹ ٹریڈ کی گاڑیوں سے وصول کی جائے گی جس کی آمدن پاک افغان شاہراہ کی مرمت پر لگائی جائے گی،چار گھنٹے بعد مظاہرین اور ضلع انتظامیہ نے مزاکرات کر کے پاک افغان شاہراہ کو کھول دیا گیا ، واضح رہے کہ ٹول ٹیکس پلازہ دو مہینے پہلے کھول دیا گیا تھا جس پر مقامی لوگوں نے پاک افغان شاہراہ بند کر کے احتجاج ریکارڈ کرایا تھا جس پر گورنر کے پی نے ٹول ٹیکس پلازے کو غیر قانونی ہونے کی وجہ سے بند کرنے کے احکامات جاری کردئے تھے اور ٹول پالزہ کو بند کردیا تھا .

مزید : پشاورصفحہ آخر