مودی کی انتہا پسندی سے بھارتی اقلیتیں غیر محفوظ ہیں،عرفان بھلہ

  مودی کی انتہا پسندی سے بھارتی اقلیتیں غیر محفوظ ہیں،عرفان بھلہ

  



فیروزوالہ(نامہ نگار) معروف قانون دان سابق صدر بار فیروزوالہ عرفان بھلہ ایڈووکیٹ نے کہا ہے کہ مودی حکومت کے منفی اقدامات اور انتہا پسند سوچ سے بھارت کی تمام اقلیتیں غیر محفوظ ہو گئی ہیں بھارت میں انتہاپسند ہندوؤں کے ہاتھوں مسلمانوں کو قتل کیا جارہا ہے پاکستان کے آئین میں اقلیتوں کوپورا تحفظ حاصل ہے اور انہیں اپنے عقائد کے مطابق زندگی گزارنے کی مکمل آزادی ہے جبکہ بھارت میں آر ایس ایس کے غنڈوں کے ذریعے مسلمانوں کے خون سے ہولی کھیلی جا رہی ہے اور مودی سرکار کے اقدامات نے پورے بھارت میں آگ لگا دی ہے۔عرفان بھلہ ایڈووکیٹ نے کہا کہ نئی دہلی میں مسلمانوں پر ہندوؤں کے حملے مودی حکومت کا طے شدہ ایجنڈا ہے۔

اورآر ایس ایس کے غنڈوں کو مسلمانوں کے قتل عام کی کھلی چھٹی دے دی گئی ہے مذہب کے نام پر مسلمانوں کا قتل عام شرمناک امر ہے فاشسٹ مودی حکومت کی سر پر ستی میں دہلی میں مسلمانوں کے قتل عام کی جتنی بھی مذمت کی جائے کم ہے‘ مودی حکومت نے پہلے تو انڈیا میں اقلیتوں کے حقوق کو سلب کیا اب مسلمانوں کی نسل کشی پر اترآئی ہے۔انہوں نے کہا کہ اقوام متحدہ کی سکیورٹی کونسل اور انسانی حقوق کی عالمی تنظیمیں بھارت میں مسلم کش فسادات کا نوٹس لیں اور غیر انسانی اقدامات کو رکوانے میں کردار ادا کریں بھارتی مسلمانوں پر ہونے والے مظالم کے خلاف ملت اسلامیہ کی بے حسی قابل مذمت ہے۔

مزید : میٹروپولیٹن 1