پنجاب یونیورسٹی سائنسدانوں نے کرونا کی تشخیصی کٹ تیار کر لی

پنجاب یونیورسٹی سائنسدانوں نے کرونا کی تشخیصی کٹ تیار کر لی

  



لاہور (پ ر)پنجاب یونیورسٹی کے سائنسدانوں نے کرونا وائرس کی تشخیص کے لئے سستی کٹ تیار کر لی ہے جس کے تحت کرونا وائرس کے مشتبہ مریض کا ٹیسٹ صرف پانچ ڈالر یعنی تقریبا آٹھ سو روپے میں ہو سکتا ہے۔ پنجاب یونیورسٹی کے معروف پروفیسر اور سنٹر آف ایکسیلینس ان مالیکولر بائیولوجی کے سائنسدان پروفیسر ڈاکٹر محمد ادریس کی سربراہی میں یہ کٹ تیار کی گئی ہے۔ میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے پروفیسر ڈاکٹر ادریس نے کہا کہ ڈائیگناسٹک کٹ کی تیاری کو ئی بڑا کارنامہ نہیں ہے تاہم حکومت کو اپنے ادارے سے ہی سستی کٹ مل جائے گی۔ انہوں نے کہا کہ جس لیبارٹری میں کرونا کے مریض کی تشخیص کے لئے ٹیسٹ کیا جائے وہ بی ایس ایل 3 کے معیار کی ہونی چاہیے تاکہ لیب میں کام کرنے والے افراد وائرس سے متاثر نہ ہوں اور نہ ہی لیب سے وائرس باہر پھیل سکے۔ انہوں نے کہا کہ چند بنیادی اجزا کی فراہمی پر ایک ہفتے میں حکومت کو ہزاروں کٹس بنا کر فراہم کر سکتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ پنجاب یونیورسٹی کیمب میں کرونا کے مشتبہ مریضوں کی تشخیص کے لئے ٹیسٹ کریں گے۔ اس موقع پر وائس چانسلر پنجاب یونیورسٹی پروفیسر نیاز احمد نے ٹیم کو ہدایت دی ہے کہ مشتبہ مریضوں میں کرونا وائرس کی تشخیص کے لئے پنجاب یونیورسٹی سے منسلک افراد کے علاوہ عوام الناس کے بھی ٹیسٹ مفت کئے جائیں تاکہ عوام اس سہولت سے فائدہ اٹھا سکیں۔ انہوں نے کہا کہ ملک و قوم کو جب کرونا جیسے چیلنجز درپیش ہوتے ہیں تو یونیورسٹیاں ایسے گھمبیر مسائل کو حل کرنے میں اہم کردار ادا کرتیں ہیں انہوں نے کہا کہ پنجاب یونیورسٹی نے تاریخ میں اہم معاملات میں ملک و قوم کی رہنمائی کی ہے اور اس مسئلے سے نمٹنے کے لئے بھی پنجاب یونیورسٹی اپنا کردار ادا کرے گی۔

مزید : میٹروپولیٹن 1