پاسبان نے کوٹا سسٹم کو سندھ ہائی کورٹ میں چیلنج کر دیا

پاسبان نے کوٹا سسٹم کو سندھ ہائی کورٹ میں چیلنج کر دیا

  



کراچی(اسٹاف رپورٹر)پاسبان ڈیمو کریٹک پارٹی کے چیئرمین الطاف شکور کی جانب سے کوٹہ سسٹم کے خلاف ایک آئینی درخواست سندھ ہائی کورٹ میں دائر کر دی گئی ہے۔پاسبان کے وکیل عرفان عزیز ایڈووکیٹ کے توسط سے دائر کردہ آئینی درخواست میں کہا گیا ہے کہ پاکستان کومعاشی طور پر بدترین حال میں پہنچانے کاذمہ دار یہی کوٹہ سسٹم ہے۔کوٹہ سسٹم کی بدولت وڈیروں، خانوں اورسرداروں کے بیٹے بڑی بڑی ملازمتوں پر قابض ہو گئے لیکن سندھ کے دیہاتوں اور ملک کے دیگر دیہی نوجوان پیچھے رہ گئے۔ یہ کوٹہ سسٹم دراصل 2013میں عملا ختم ہو گیا تھا لیکن اسے 2020 میں بھی چلایا جا رہا ہے جو کہ غیر آئینی و غیر قانونی ہے۔ کوٹہ سسٹم میرٹ کا قتل عام اور صلاحیتوں کا انکار ہے جس کی بدولت پورے ملک بالخصوص سندھ میں ناانصافی اور سماجی ناہمواری نے جنم لیا ہے۔کوٹہ سسٹم نے پاکستان کو تباہی کے اس دہانے پر پہنچا دیا ہے جہاں ایک معمولی سا دھکا بھی اسے تاریکی کی گہرائیوں میں دھکیل سکتا ہے۔ کوٹہ سسٹم کی بدولت نا اہل اوپر پہنچ گئے اور اہلافراد ایڑیاں رگڑتے رہ گئے۔کوٹہ سسٹم کی بدولت صلاحیت اور اہلیت نہ رکھنے والے افراد نے محکموں کا بیڑہ غرق کردیا۔پاسبان کے وکیل عرفان عزیز ایڈووکیٹ نے درخواست میں موقف اختیار کیا ہے کہ پورے ملک سے کوٹہ سسٹم کا خاتمہ کر کے میرٹ کا نفاذ یقینی بنایا جائے۔

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر