کرونا وائرس صورتحا ل تشویشناک، کراچی میں کسی صورت بازار بند نہیں کرینگے: وزیراعلی سندھ

کرونا وائرس صورتحا ل تشویشناک، کراچی میں کسی صورت بازار بند نہیں کرینگے: ...

  



کراچی(اسٹاف رپورٹر) وزیراعلیٰ سندھ سید مراد علی شاہ نے کہاہے کہ کرونا وائرس کے حوالے سے صورتحال تشویش ناک ضرورہے لیکن پریشان کن نہیں،کسی بھی صورت میں مارکیٹیں بند کریں گے اورنہ تجویز کریں گے، تفتان سے جتنے لوگ سندھ آئے اس سے کہیں زیادہ پنجاب پہنچے ہیں، تفتان میں کئی لوگوں کو ایک ساتھ قرنطینہ میں رکھا گیا تھا،چین سے صوبے میں آنے والے کسی بھی فرد میں کرونا وائرس کی تصدیق نہیں ہوئی، احتیاطی تدابیر کے طور پر کراچی میں سکول بند کیے تو سی ویو بھر گیا،مزید666افراد سکھرسے آرہے ہیں۔پیر کووزیراعلیٰ سندھ سید مراد علی شاہ نے نیوز کانفرنس کے دوران کہا کہ کرونا وائرس کا ابھی تک علاج نہیں ہے کیونکہ اگریہ وائرس کسی میں منتقل ہو جائے تو ہوسکتا ہے اسے کچھ نہ ہو لیکن وہ کسی اورکو متاثرکرسکتا ہے، اس وقت سکھر میں قرنطینہ میں آٹھ سو افراد کو رکھا گیا ہے۔ سکھر میں قرنطینہ سب سے زیادہ محفوظ ہے جہاں ہر شخص کو علیحدہ فلیٹ میں رکھا گیا ہے۔ ہم مثبت اورمنفی افراد کوالگ الگ رکھ رہے ہیں، جوبھی کیس آئے گا بتائیں گے کیونکہ چھپانے کا مقصد نقصان پہنچانا ہے۔وزیراعلی سندھ نے کہا کہ مسئلہ یہ ہے کہ سماجی رابطے کم کرنا ہونگے۔ہم نے علامہ شہنشاہ نقوی کو سکھربھیجا ہے تاکہ لوگوں کو اعتماد دلوائیں، جن لوگوں کو سکھر میں دیکھ بھال نہیں کرسکے ان سے میں معافی مانگتا ہوں۔اانہوں نے کہا کہ تفتان سے آنے والے 30افراد کے ٹیسٹ کیے گئے، 11 مثبت آئے جس کے بعد سندھ میں کرونا وائرس کے مریضوں کی تعداد 87ہو گئی ہے۔ ہم پر الزام عائد کیا جاتا ہے کہ تفتان میں لوگ آرام سے تھے ہم انھیں بسوں میں بھر کر یہاں لے آئے، ہم کسی کو نہیں لائے بلکہ وفاقی حکومت نے لوگوں کو پہنچایا ہے۔ تفتان سے جتنے لوگ سندھ آئے اس سے کہیں زیادہ پنجاب پہنچے ہیں۔

مراد علی شاہ

مزید : صفحہ اول