کرناہ میں تیز ہوائیں چلنے سے مڈل سکول اور مسجد سمیت 8مکانات کو نقصان

کرناہ میں تیز ہوائیں چلنے سے مڈل سکول اور مسجد سمیت 8مکانات کو نقصان

  

سری نگر(کے پی آئی)سرحدی تحصیل کرناہ میں تیز ہوائیں چلنے سے ایک مڈل سکول اور ایک مسجد سمیت 8مکانات کو نقصان ہوا جبکہ اس دوران ایک خاتون سمیت دو افراد زخمی ہو گئے ۔ کرناہ میں گرج چمک کے ساتھ پہلے بارشیں ہوئیں اور ساتھ ہی تیر ہواں کے چلنے کا سلسلہ شروع ہوا جس کی وجہ سے لوگ گھروں میں سہم کر رہ گئے۔ تیز ہواں کے نتیجے میں کئی ایک بھاری بھرکم در خت جڑ سے اکھڑ گئے اور بجلی کی ترسیلی لائنوں اور کھمبوں کو بھی شدید نقصان پہنچا ۔ کنڈی دلداد میں عبدالحمید جو ولد عبداللہ جو کے مکان کی دوسری منزل اور چھت زمین پر گر گئی جبکہ مڈل سکول فیض آباد دلدار پر اخروٹ کا درخت جڑ سے اکھڑ کر آ گرا جس سے سکول عمارت کو نقصان پہنچا ۔ بانڈی مقام میں قاضی اعجاز ولد عبدا لطیف کے مکان کی چھت گرگئی اور مکان میں موجود ثمینہ نامی ایک خاتون اور صفدر علی زخمی ہوئے ۔اسی طرح قاضی محمد عاز م ساکن بانڈی ، یعقوب شاہ ولد سرور شاہ ، الطاف حسین شاہ ولد طالب شاہ ساکناں پنجتارہ کے مکانوں کو بھی تیر ہوا کی وجہ سے نقصان ہوا ۔

پنجتارہ گاں میں ہی ایک مسجد شریف کو بھی نقصان ہونے کی اطلاع ہے ۔سب ضلع ہسپتال ٹنگڈار کی دوسری منزل کے شیشے اور کھڑکیاں بھی ٹوٹ گئے ۔ ٹنگڈار سے گبرا اورٹنگڈارسے ٹاڈا سڑک پر بھی بھاری پسیاں اور درخت گرنے سے شاہراہ رات بھر گاڑیوں کی آمد ورفت کیلئے بند رہی۔ سنیچر کو دوپہر 12بجے ان سڑکوں کو گاڑیوں کی آمد ورفت کیلئے بحال کر دیا گیا ۔ممبر اسمبلی کرناہ ایڈوکیٹ راجہ منظور نے سنیچر کی صبح ان علاقوں کا دورہ کر کے انتظامیہ کو ہدایت دی کہ وہ نقصان کا تخمینہ لگا کر متاثر افراد کو امداد فراہم کریں۔ انہوں نے رینج افسر سے کہا کہ جن افراد کو لکڑی کی ضرورت ہے انہیں فوری طورلکڑی فراہم کی جائے ۔

مزید :

عالمی منظر -