بجلی کی پیداوار میں کمی سے لوڈ شیڈنگ میں اضا فہ،شہری سراپا احتجاج

بجلی کی پیداوار میں کمی سے لوڈ شیڈنگ میں اضا فہ،شہری سراپا احتجاج

  

لاہو ر ( کامرس رپورٹر)ملک میں بجلی کی ڈیمانڈ میں اضافہ اور پیداوار میں کمی سے بدترین لوڈ شیڈنگ کا سلسلہ مزید بڑھ گیا ۔ بار بار ہونے والی لوڈ شیڈنگ سے معاملات زندگی ٹھپ ہو کررہ گئے ۔ صنعتی پہیہ بھی متاثر ہونے لگا ۔ لوڈ شیڈنگ سے بیشتر علاقوں میں پانی کی بھی قلت پیدا ہو گئی ۔کاٹیج انڈسٹریز تقریبا ٹھپ ہو گئی جس سے لاکھوں افراد بے روز گا ہو گئے ۔شارٹ فال اور مجموعی پیداوار کا فرق کم رہ جانے سے بڑے بریک ڈاؤن کا خطرہ پیدا ہو گیا ہے ۔ ملک کے بیشتر علاقوں میں گرمی کی شدت بڑھ جانے سے بجلی کی ڈیمانڈ ساڑھے اٹھارہ ہزار میگاواٹ سے بھی بڑھ گئی ہے دوسری جانب ڈیموں سے پانی کے اخراج میں کمی سے ہائیڈل کی پیداوار کمی ہوئی ہے گزشتہ روز تربیلا سے 70 ہزارکیوسک جبکہ منگلا سے 22 ہزار کیوسک پانی کا اخراج کیا گیا ۔ شارٹ فال بڑھ جانے سے لیسکو سمیت دیگر ڈسکوز کونیشنل ٹرانسمیشن سسٹم سے ڈیمانڈ کے مقابلہ میں ساٹھ فیصد بجلی موصول ہو رہی ہے جس کے باعث لیسکو سمیت تمام ڈسکوز نے اعلانیہ کے ساتھ غیر اعلانیہ لوڈ شیڈنگ کادورانیہ بھی بڑھادیا ہے، مرمت کے نام پر تمام سب ڈو یژنوں میں دو سے تین فیڈرز آٹھ سے دس گھنٹے بند رکھے گئے ان فیڈرز پر بجلی کی فراہمی کے بعد بھی لوڈ شیڈنگ کی گئی ۔گزشتہ روز شہروں میں دس گھنٹے تک اور دیہی علاقوں و چھوٹے شہروں میں بارہ گھنٹے کی لوڈ شیڈنگ کی گئی ۔ انرجی مینجمنٹ سیل کے ذرائع کے مطابق گزشتہ روز بجلی کی مجموعی ڈیمانڈ 18760 میگا واٹ جبکہ پیداوار 11550 میگا واٹ رہی طلب و رسد میں 7210 میگا واٹ کا فرق رہا ۔

مزید :

علاقائی -