سرکاری خزانے سے وزیر اعظم کی تشہری مہم اور بیرون ملک دوروں پر پابندی کیلئے دائر درخواست پر رجسٹرار آفس کا اعتراض ختم

سرکاری خزانے سے وزیر اعظم کی تشہری مہم اور بیرون ملک دوروں پر پابندی کیلئے ...

لاہور(نامہ نگار خصوصی)لاہور ہائیکورٹ کے مسٹر جسٹس سید منصور علی شاہ نے سرکاری خزانے سے وزیر اعظم نواز شریف کی تشہری مہم اور بیرون ملک دوروں پر پابندی کے لئے دائر درخواست پر رجسٹرار آفس کا اعتراض ختم کرتے ہوئے عدالت عالیہ کے دفتر کو ہدایت کی ہے کہ درخواست کو سماعت کے لئے مناسب بنچ میں پیش کیا جائے ۔یہ درخواست بیرسٹر جاوید اقبال جعفری نے دائر کررکھی ہے جس پر رجسٹرار آفس نے اعتراض عائد کیا تھا کہ درخواست گزار متاثرہ فریق نہیں ہے اس لئے یہ درخواست قابل پذیرائی نہیں ہے ۔درخواست میں موقف اختیار کیا گیا ہے کہ وزیر اعظم میاں نواز شریف قومی خزانے کی رقم خرچ کر کے مسلسل غیرضروری بیرونی دورے کر رہے ہیں، یہ دورے ملکی مفاد کی بجائے غیرملکی رہنماوں سے ذاتی تعلقات قائم کرنے اور ان کے ساتھ ذاتی بزنس استوار کرنے سے متعلق ہوتے ہیں جبکہ ان دوروں کے ذریعے وہ عالمی رہنماوں کی جانب سے بھجوائے گئے دعوت ناموں پہ ان کی شادی بیاہ کی تقریبات میں شرکت کرتے ہیں،انہوں نے کہا کہ وزیر اعظم قومی خزانے کی رقم کو میڈیا پر ذاتی تشہیر کے لئے خرچ کر رہے ہیں جو مقروض قوم کے ساتھ سنگین مذاق کے مترادف ہے، درخواست پر رجسٹرار آفس نے ناقابل سماعت ہونے کا اعتراض عائد کیا ہے،فاضل جج نے درخواست کی اعتراض کیس کے طور پر سماعت کے بعد رجسٹرار آفس کا اعتراض ختم کر دیا۔

مزید : علاقائی