کراچی کے لوگوں کا سیاسی اور معاشی استحصال کیا جا رہا ہے ، خواجہ اظہار

کراچی کے لوگوں کا سیاسی اور معاشی استحصال کیا جا رہا ہے ، خواجہ اظہار

 کراچی (اسٹاف رپورٹر) سندھ اسمبلی میں اپوزیشن لیڈر خواجہ اظہار الحسن نے کہا ہے کہ کراچی کے لوگو ں کا سیاسی اور معاشی استحصال کیا جارہا ہے ۔جو شہر پورے ملک کو پالتا ہے وہ پانی کی بوند بوند کو ترس رہا ہے اور کچرے کا ڈھیر بن چکا ہے ۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے پیر کو ایم کیو ایم کے ارکان سندھ اسمبلی سیف الدین خالد ،یوسف شاہوانی اور شازیہ جاوید کے ہمراہ ڈپٹی کمشنر غربی اور ایڈمنسٹریٹر بلدیہ غربی سے ملاقات کے بعد میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کیا ۔خواجہ اظہار الحسن نے کہا کہ کراچی کے ایک ایک ضلع میں جاکر ان کے مسائل سن رہے ہیں۔ حکومت کی کارکردگی کی بدترین مثال ہے۔ ایف بی آر نے ٹیکس نہ دینے کی مد میں 70کروڑ روپے کراچی کے اضلاع سے کاٹ لئے ہیں جس کی وجہ سے پچھلے تین ماہ سے ضلعی ملازمین کو تنخواہ نہیں ادا کی گئی ہیں ۔انہوں نے کہا کہ بلدیہ کے ملازمین کو ٹیکس چوری کے پیسے سے تنخواہ دی جاتی تھی۔جو پیسے ایف بی آر نے کاٹے وہ تو تھے ہی ٹیکس کے پیسے ،ان کا رونا کیوں رویا جارہا ہے ۔انہوں نے کہا کہ کراچی میں گرمی کی شدت میں اضافہ ہورہا ہے ۔شہر میں ہیٹ اسٹروک سینٹرز کو فعال کیا جائے ۔رمضان کی آمد سے قبل عوام کے بنیادی مسائل حل کیے جائیں ۔انہوں نے کہا کہ پورے کراچی میں ایک روپے میں جعلی ڈومیسائل بنائے جارہے ہیں ۔کراچی کے لوگوں کا سیاسی اور معاشی استحصال کیا جارہا ہے ۔جو شہر پورے ملک پالتا ہے وہ پانی کی بوند بوند کو ترس رہا ہے اور کچرے کا ڈھیر بن چکا ہے ۔

مزید : کراچی صفحہ اول