ڈیرہ میں نواز شریف کے دورہ کو حتمی شکل دی گئی

ڈیرہ میں نواز شریف کے دورہ کو حتمی شکل دی گئی

ڈیرہ اسماعیل خان(بیورورپورٹ)وزیراعظم پاکستان کے دورہ ڈیرہ کوحتمی شکل دیدی گئی۔انتظامیہ اورپولیس کے اعلیٰ افسران کاجلسہ گاہ کادورہ‘سیکورٹی ہائی الرٹ رہے گی‘دفاتر‘یونیورسٹی اورتعلیمی ادارے کھلے رہیں گے اورپولیومہم بھی جاری رہیگی۔تفصیلات کے مطابق وزیراعظم پاکستان میاں محمدنوازشریف جے یوآئی کے سربراہ مولانافضل الرحمن کی خصوصی دعوت پرآج ڈیرہ کادورہ کررہے ہیں۔انکے ہمراہ گورنرخیبرپختونخواہ اقبال ظفرجھگڑا بھی ہونگے۔یارک کے مقام پر وہ سی پیک کاافتتاح کرینگے جسکے بعدرتہ کلاچی اسٹیڈیم میں جلسے عام سے خطاب کرینگے۔رتہ کلاچی اسٹیڈیم کے قریب تجارتی مراکزاوراین جی اوزکے دفاترسیکورٹی خدشات کی بناء پربندکردےئے گئے ہیں۔جلسے میںآنیوالے لوگوں کیلئے دھوپ کی شدت سے بچنے کیلئے شامیانے بھی لگادےئے گئے ہیں۔اسٹیڈیم میں صرف جے یوآئی کے بینرزاورجھنڈے آویزاں ہیں۔سٹیج پرمسلم لیگ ن ڈیرہ کے کسی بھی مقامی رہنماء کی سیٹ نہیں رکھی گئی ہے۔وزیراعظم کی جلسہ کی سیکورٹی کیلئے چیف سیکورٹی آفیسرفیصل کامران کی قیادت میں32رکنی ٹیم ڈیرہ پہنچ چکی ہے جنہوں نے رتہ کلاچی سٹیڈیم کادورہ کیا۔اس موقع پر ڈپٹی کمشنرنثاراحمداورڈی پی اویاسرآفریدی‘اے سی زاہدحامدوڑائچ‘اے ڈی سی عمرجاوید‘ٹی ایم اوعمرکنڈی سمیت دیگرافسران بھی موجودتھے۔سینیٹرمولاناعطاء الرحمن اورافغان کمشنریٹ کے پی کے مولاناضیاء الرحمن بھی موقع پرموجودتھے۔مولاناعطاء الرحمن اورمولاناضیاء الرحمن نے وزیراعظم کی سیکورٹی ٹیم کوبریفنگ بھی دی۔اسٹیڈیم کے مین گیٹ کے علاوہ پانچوں گیٹ استعمال ہونگے۔جلسے میں شرکت کیلئے آنیوالوں کیلئے قریبی نہرپرعارضی پل بھی بنادےئے گئے ہیں۔ڈی پی اوڈیرہ کے مطابق شہرکی سیکورٹی انتہائی سخت کردی گئی ہے۔داخلی وخارجی راستوں پرپاک فوج کے ہمراہ مشترکہ ناکہ بندیاں کی گئی ہیں۔ہرآنے جانیوالے افرادکی تلاشیاں لی جارہی ہیں۔سرچ اینڈاسٹرائیک اپریشن کاسلسلہ بھی جاری ہے۔2ہزار5سوپولیس اہلکارسیکورٹی کیلئے تعینات کئے گئے ہیں۔ٹریفک کیلئے پلان مرتب کرلیاگیاہے۔ٹانک‘پروآ‘اسلام آبادسے آنیوالے لوگوں کیلئے پارکنگ رتہ کلاچی کے قریب بنائی گئی ہے جبکہ بنوں سے آنیوالے لوگوں کیلئے پارکنگ بنوں روڈکی طرف بنائی گئی ہے۔ڈی سی ڈیرہ کے مطابق اسکول کالجزویونیورسٹیاں کھلی رہیں گی۔پولیومہم جاری رہیگی۔عوام سے اپیل ہے کہ وہ انتظامیہ سے تعاون کرے۔

مزید : پشاورصفحہ اول