، پنجاب کے اراضی ریکارڈ سنٹر کو لاوارث نہیں چھوڑ سکتے، مینیجرآپریشنل

، پنجاب کے اراضی ریکارڈ سنٹر کو لاوارث نہیں چھوڑ سکتے، مینیجرآپریشنل

  

لاہور(اپنے نمائندے سے)دفتری ڈسپلن کی خلاف ورزی ،اختیارات کا ناجائز استعمال عوام الناس سے غیر مناسب رویہ ۔بے وجہ انتظار،تاخیر اور سستی برتنے کے الزامات درست ثابت ہو گئے ،ڈپٹی پی ڈی پنجاب کی ہدایت پر اچانک فیروزوالا اراضی ریکارڈ سنٹر پر مارے جانے والے چھاپے نے غیر قانونی اور خلاف ضابطہ جاری پریکٹس کو عیاں کر دیا ،سروس سنٹر انچارج ،اے ڈی ایل آر اور دیگر سٹاف حسب معمول غائب نظر آیا،عوام 8بجے سے لے کر 11بجے تک کنٹریکٹ ملازمین کے انتظار میں کھڑی نظر آئی ،شہریوں کا شدید احتجاج،مینیجر آپریشنل پنجاب نے قوانین کے مطابق کارروائی کی یقین دھانی کر وا دی۔مزید معلوم ہوا ہے کہ ڈپٹی پراجیکٹ ڈائریکٹر پنجاب مقبول احمد دھاولہ کی ہدایت پر مینیجرآپریشنل پنجاب عثمان احمد نے گزشتہ روز تحصیل فیروز والا کے اراضی ریکارڈ سنٹر پر اچانک چھاپہ مارا تو سروس سنٹر انچارج محمد اجمل غیر حاضر پائے گئے ۔اس طرح اے ڈی ایل آر محمد آصف ،سروس سنٹر آفیشل ممتاز،کاشف بٹ،جاوید بٹ بھی بغیر اطلاع کے غیر حاضر پائے گئے ۔جبکہ صبح 8بجے سے آنے والے شہریوں نے مینیجر آپریشنل پنجاب کو گھیرے میں لے لیا اور شکایات کے انبار لگا دیئے۔ قبل ازیں بھی مذکورہ سروس سنٹر انچارج کے خلاف دفتری ڈسپلن کی خلاف ورزی ۔اختیارات کے ناجائز استعمال۔عوام الناس سے غیر مناسب رویہ اپنانے اور بے وجہ عوام الناس کو خوار کرتے ہوئے ۔گھنٹوں انتظار کی سولی پر چڑھانے کے سنگین الزامات کے تحت انکوائری کی جارہی تھی ۔جس کی روزنامہ پاکستان نے نشاندہی کی تھی۔اس موقع پر مینجر آپریشن پنجاب عثمان احمد نے موقع پر کھڑے شہریوں کو یقین دھانی کروائی کہ اس غیر قانونی پریکٹس کا خاتمہ کیا جائے گا اور اس میں ملوث سرکاری ملازمین کے خلاف سخت قانونی کارروائی عمل میں لائی جائے گی اور تحریری طور پر ان کی سنگین شکایات پی ڈی پنجاب سمیت تمام انتظامی افسران کے نوٹس میں بھی لا کر حسب ضابطہ کارروائی عمل میں لائی جائے گی جبکہ اس کے بعد تحصیل کامونکی اورتحصیل گوجرانوالہ سٹی کے اراضی ریکارڈ سنٹر ز میں بھی چھاپے مارے جائیں گے۔دوسری طرف ڈپٹی پی ڈی پنجاب مقبول احمد دھاولہ کا کہنا ہے کہ پورے پنجاب کے اراضی ریکارڈ سنٹر کو لاوارثوں کی طرح نہیں چھوڑ سکتے ،انتہائی سخت مانیٹرنگ کی جارہی ہے۔پہلے بھی وارننگ دے چکا ہوں اور صاف صاف کہہ چکا ہوں کہ صرف کام کرنے والے اور گڈ گورننس دیکھانے والے اس سسٹم میں رہے گے ۔کام چور ۔تاخیری حربے برتنے اور اختیارات کا ناجائز استعمال کرنے والی کالی بھیڑوں کو محکمہ سے نکال باہرپھینکیں گے۔کسی سے کوئی رعائت نہیں برتی جائے گی۔

مینیجرآپریشنل

مزید :

راولپنڈی صفحہ آخر -