متروکہ بورڈ کی جائیداد وں پر ناجائز قبضے ختم کروا کے دم لو ں گا ، سدیق الفاروق

متروکہ بورڈ کی جائیداد وں پر ناجائز قبضے ختم کروا کے دم لو ں گا ، سدیق الفاروق

 ننکانہ صاحب (نمائندہ خصوصی ) چیئرمین متروکہ وقف املاک بورڈ صدیق الفاروق نے گورودوارہ جنم استھان ننکانہ صاحب میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہا کہ متروکہ وقف املاک بورڈ ننکانہ کا دفتر جلائے جانے اور ہنگاموں کے بعد پوری د نیا میں یہ افواہ پھیل گئی کہ گورودوارہ جنم استھان ننکانہ صاحب کی دیوار گرادی گئی ہے جس طرح مسلمانوں کے لئے خانہ کعبہ مقدس ہے اسی طرح پوری دنیا کے سکھوں کے لئے گورودوارہ جنم استھان مقدس ہے جس کے بعد مجھے کئی ممالک سے سکھوں کے فون آنے شروع ہوگئے میں نے انہیں کہا کہ گورودوارہ جنم استھان مکمل طور پر محفوظ ہے میں ساری دنیا کو یہ پیغام دینا چاہتا ہوں کہ گورودوارہ جنم استھان کو خراش تک نہیں آئی، سکھ اگر یہاں آکر خود دیکھنا چاہتے ہیں تو ہم ویزے دیں گے وہ آکر دیکھ لیں اور شرپسندوں کی شرپسندی میں بالکل نہ آئیں۔ انہوں نے کہا کہ ننکانہ صاحب میں باباگورونانک کے جنم دن سے قبل بابا گورونانک انٹرنیشنل یونیورسٹی کے قیام کا سنگ بنیاد رکھ دیا جائے گا ، پاکستان کی چار یونیورسٹیوں کے وائس چانسلرز اس سلسلہ میں رہنمائی کریں گے انہوں نے کہا کہ ننکانہ صاحب کو اس کی انٹرنیشنل اہمیت کے پیش نظر پلاننگ کرکے بہت جلد خوبصورت شہر بنادیا جائے گا ننکانہ صاحب کی آئندہ 50سالوں کے لئے پلاننگ ہورہی ہے جہاں اپارٹمنٹس بنائے جائیں گے جس میں مزارعین، تاجروں، وکلاء، صحافیوں اور بے گھر لوگوں کو جگہ ملے گی جس طرح روز بروز آبادی میں اضافہ ہورہا ہے اسی کو مدنظر رکھتے ہوئے 2066ء تک کی پلاننگ کی جارہی ہے انہوں نے کہا کہ ننکانہ صاحب میں چھوٹے کاشتکاروں کو بیدخل نہیں کیا جائے اور نہ ان کی لیز کینسل کر رہے ہیں شہر بھر میں چار پانچ ، دس مرلہ کے 32سو مکانات میں رہائش پذیر خاندان محکمہ کے کرایہ دار بن جائیں جن لوگوں کو غریب بتایا جارہا ہے وہ چار کنال ، آٹھ کنال زمین پر قبضہ کرکے ماربل فیکٹری یا رائس ملز نہیں بناتے جس تعمیر کو گرایا گیا تھا وہ آٹھ کنال پر مشتمل تھی ، آٹھ کنال پر غریب شخص مکان نہیں بناتا۔ انہوں نے کہا کہ ننکانہ صاحب میں ایک ہزار 5پٹہ دار 1974ء سے بیٹھے ہیں جبکہ 2345پٹہ داروں کی ہر تین سال بعد نیلامی ہوتی تھی جو اب مدت بڑھا کر پانچ سال کردی گئی ہے انہوں نے کہا کہ ننکانہ میں ناجائز تجاوزات کے خلاف آپریشن کی پہلے ہی ضلعی انتظامیہ کو اطلاع کردی گئی تھی مگر ڈی سی او ننکانہ نے سنجیدگی کا مظاہرہ نہیں کیا اور نااہلی برتی ہے انہوں نے کہا کہ ملک ذوالقرنین ڈوگر ایم پی اے نے محکمہ اوقاف کی ساڑھے تین ارب کی زمین پر مختلف ناموں سے قبضہ کر رکھا ہے جبکہ محکمہ کی 20ایکڑ اراضیٰ پر چوہدری محمد ریاض کے اہل و عیال قابض ہیں کیا یہ غریب آدمی ہے ، ملک ذوالقرنین ڈوگر ہماری پارٹی کی صفوں میں آکر بیٹھا ہے یہ مسلم لیگی نہیں ہے یہ اربوں ، کھربوں روپے کا معاملہ ہے ،صدیق الفاروق کی گردن پر چھری بھی رکھ دی جائے جھوٹ نہیں بولتا انہوں نے کہا کہ اگر میں نے رشوت لینی ہو اور قبضہ گروپوں سے ملنا ہو تو قبضہ گروپ نوٹوں کی بوریاں بھر کر میرے گھر پہنچانے کو تیار ہیں مجھے ایک فیصلہ کرنے کے لئے 3ارب کی پیش کش ہوئی کہ فیصلہ ہمارے حق میں کردو مگر میں نے کہا کہ میں فیصلہ میرٹ پر کروں گا مجھے تین سو ارب روپے بھی دے دئیے جائیں تو میں میرٹ سے نہیں ہٹ سکتا ۔انہوں نے کہا کہ میں نے وزیراعلی پنجاب کی ہدایت پر پہلے بھی ننکانہ صاحب میں چار سو کنال محکمہ کی اراضیٰ واگزار کروائی تھی اور اب پھر حکومت کی مدد سے ناجائز قبضے ختم کرواؤں گا۔پریس کانفرنس کے موقعہ پر سیکرٹری اوقاف جاوید بشیر، ایڈمنسٹریٹر ننکانہ وہاب گل، ڈپٹی ایڈمنسٹریٹر ننکانہ محمد اسحاق، پاکستان گورودوارہ پربندھک کمیٹی کے جنرل سیکرٹری سردار گوپال سنگھ چاولہ بھی موجود تھے۔

صدیق الفاروق

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر