پانامہ لیکس کو وزیراعظم تک محدود نہ رکھاجائے،مولانا اسد اللہ بھٹو

پانامہ لیکس کو وزیراعظم تک محدود نہ رکھاجائے،مولانا اسد اللہ بھٹو

کراچی (اسٹاف رپورٹر)نائب امیرجماعت اسلامی پاکستان وسابق ایم این اے اسداللہ بھٹوایڈووکیٹ نے کہا ہے کہ پانامہ لیکس کو صرف وزیراعظم نوازشریف تک محدود نہ رکھا جانا چاہئے،بلکہ حکومت اور اپوزیشن سمیت جن بھی افراد کے نام آئے ہیں ان کو بھی تفتیش کے دائرے میں لاکرسب کا بلاامتیاز وکڑااحتساب کیا جائے،حکومت کی جانب سے ارسال کردہ ٹی او آرز 1956کے انکوئری ایکٹ کے تحت ہیں اس حوالے سے نیا ایکٹ لاکر قانون سازی کی اشد ضرورت ہے،جس میں انکوائری کے ساتھ ٹرائل ایکٹ بھی شامل ہو تاکہ انکوائری کے ساتھ مجرم ثابت ہونے پر سخت سزا بھی دی جاسکے۔چوروں کو پکڑنے کیلئے محض کمیشن یا تحقیقاتی کمیٹی بنانے کی بجائے ملکرٹھوس قانون سازی کی جائے۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے دورہ ملیر پریس کلب کے موقع پر صحافیوں سے بات چیت کرتے ہوئے کیا۔اس موقع پر امیر ضلع بن قاسم محمد اسلام امیرزون مولانا ضیاء الرحمان فاروقی،صوبائی سیکرٹری اطلاعات مجاہد چنا،حاجی خان لاشاری،قدرگل سمیت دیگر مقامی رہنما بھی ساتھ موجود تھے۔ قبل ازیں انہوں نے جماعت اسلامی گلشن حدیدزون کے تحت مختلف دعوتی و عوامی اجتماعات سے خطاب بھی کیا۔اسداللہ بھٹو کا مزید کہنا تھا کہ چیف جسٹس آف پاکستان نے حکومتی ٹی اوآرز کو مسترد کرکے اپوزیشن کے موقف کی تائید کی ہے۔موجودہ بحران کے خاتمے کیلئے ضروری ہے کہ حکومت اور اپوزیشن ملکر قانون سازی کرے تاکہ جمہوریت کے خلاف ہونے والی سازشوں کو ناکام،بے یقینی کا خاتمہ اورقوم کی لوٹی ہوئی دولت کو واپس لایا جاسکے۔ایک سوال کے جواب میں انہوں نے کہا کہ وزیراعلیٰ سندھ سید قائم علی شاہ اب حکومت سندھ پر بوجھ بن چکے ہیں،گذشتہ 8سالوں سے پیپلزپارٹی سندھ پر راج کررہی ہے مگر اس وقت بھی سندھ کے عوام صحت وتعلیم سمیت زندگی کی بنیادی سہولیات سے بھی محروم ہیں۔تھرمیں روزانہ معصوم بچے موت کے منہ میں جارہے ہیں مگرحکومت بے حسی کی عملی تصویر بنی ہوئی ہے۔ملیر سمیت پورے سندھ میں حکومتی سرپرستی میں سرکاری زمینوں پر قبضے کئے گئے ہیں۔انہوں نے زمینوں پر قبضہ کے حوالے سے چیف جسٹس سندھ ہائی کورٹ سے ازخود نوٹس لینے کا مطالبہ کرتے ہوئے کہا کہ میڈیا میں آنے والی خبروں کو بنیاد بناکر عدالتی تحقیقاتی کمیٹی کے ذریعے تحقیقات کرکے قبضہ مافیا کے خلاف سخت کاروائی کی جائے۔اسٹیل مل سمیت قومی اداروں کی نیلامی محنت کشوں کا معاشی قتل ہوگا، اداروں کی بحالی اور ملک کی خوشحالی کیلئے کرپشن کا خاتمہ کیا جائے۔اسٹیل مل ای قومی ادارہ اہے،ملازمین کو جلد تنخواہیں ادا کی جائیں ،اس کو چلایا جائے،اسٹیل مل کے حوالے سے جماعت اسلامی مزدوروں کے ساتھ کھڑی ہوگی ۔

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر