کمیشن کھانے کا چکر ، اسٹیشن کی انگریزوں دور کی بنی مضبوط ترین حفاظتی دیوار مسمار

کمیشن کھانے کا چکر ، اسٹیشن کی انگریزوں دور کی بنی مضبوط ترین حفاظتی دیوار ...

راولپنڈی(سید گلزار ساقی سے) ریلوے راولپنڈی کی انتظامیہ نے انگریز دور کی بنی ہوئی بھاری پتھروں کی مضبوط ترین دیوار کو گر ا کر نئی حفاظتی دیوار بنانے کیلئے کروڑوں روپے کے ٹھیکے جاری کر دیئے، ٹھیکیدار نے فوری کام شروع کر دیا، ریلوے ورکرز مضبوط دیوار گرانے پر شدید اضطراب کا شکار ہیں ، وفاقی وزیر ریلوے خواجہ سعد رفیق بھی بے خبر ہیں ،ذرائع سے معلوم ہوا ہے کہ راولپنڈی ریلوے اسٹیشن کی حفاظتی دیوار جو کہ کئی کلومیٹر پر مشتمل ہے او ریہ حفاظتی دیوار انگریز دور میں بھاری اور مضبوط پتھروں اور سفید سیمنٹ،چونا کے ساتھ مضبوطی کے ساتھ تعمیر کی گئی تھی جوکہ ابھی تک مضبوطی سے کھڑی تھی ، اس مضبوط اور انگریز دور کی بنی ہوئی پتھروں کی حفاظتی دیوار کو گرا کر ریلوے انتظامیہ نے کئی کلومیٹر پر مشتمل نئی حفاظتی دیوار بنوانے کیلئے کروڑوں روپے کا ٹھیکہ ٹھیکیدار کو دے دیا ہے معلوم ہوا ہے کہ ریلوے انتظامیہ کی ہدایت پر عمل کرتے ہوئے پتھروں کی دیوار کو گرانے کیلئے بھاری مشینری لگانا پڑی تھی اتنی مضبوط دیوار ہونے کے بعد ریلوے انتطامیہ کو کروڑوں روپے خرچ کرنے کی ضرورت کیوں پڑی ادھر ذرائع کا کہنا ہے کہ ٹھیکدار نے جو حفاظتی دیوار گرائی ہے اس کے اندر سے نکلنے والے پتھر بھی کروڑوں روپے مالیت کے تھے جو کہ غائب کر دیئے گئے ہیں،اِن پتھروں کی قیمت کا نقصان بھی محکمہ ریلوے کو اٹھانا پڑا ہے، موجودہ انتظامیہ من مانے کام کررہی ہے جبکہ وفاقی وزیر ریلوے خواجہ سعد رفیق بھی راولپنڈی اسٹیشن کی انگریز دور کی تعمیر حفاظتی دیوار گرانے جانے ،کروڑوں روپے کے میٹریل ،پتھروں سمیت نئے ٹھیکہ جات سے بے خبر ہیں ، ادھر ریلوے انتظامیہ کے ٹھیکیدار کو ٹھیکہ دیتے ہی فوراً کام شرفوع کر نے کا حکم دیا ہے جبکہ ریلوے کو چاہیے تھا کہ پرانی دیوار جہاں سے کمزور یا ٹوٹ چکی تھی وہاں چند لاکھ لگا کر مضبوط کی جا سکتی تھی لیکن ریلوے انتظامیہ کو کسی کا ڈر نہیں ہے کیونکہ وفاقی وزیر ریلوے خواجہ سعد رفیق نے زیادہ تر افسران اپنے من پسند تعینات کر رکھے ہیں۔

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر