کویت میں حوثی باغیوں کیساتھ مذاکرات ابھی کسی نتیجے پر نہیں پہنچے،یمن

کویت میں حوثی باغیوں کیساتھ مذاکرات ابھی کسی نتیجے پر نہیں پہنچے،یمن

جدہ ( بیورو چیف) یمن کی حکومت نے وضاحتی بیان میں اعلامیہ جاری کیا ہے کہ وزیراعظم اوران کی فیملی کیخلاف نیب میں تحقیقات کرانے کیلئے لاہور ہائیکورٹ میں متفرق درخواست دائر

لاہور(نامہ نگار خصوصی)چیف جسٹس پاکستان کی طرف سے پانامالیکس کے معاملے پر جوڈیشل کمیشن کے قیام کے لئے حکومتی خط کا جواب دیئے جانے کے بعد وزیراعظم نواز شریف اوران کی فیملی کے خلاف نیب میں تحقیقات کرانے کے لئے لاہور ہائیکورٹ میں متفرق درخواست دائر کر دی گئی۔یہ درخواست اظہر صدیق ایڈووکیٹ کی جانب سے دائر کی گئی ہے جس میں موقف اختیار کیا گیا ہے کہ پانامالیکس میں وزیر اعظم نواز شریف کے خاندان کے دیگر افراد کا نام بھی سامنے آیا ہے اور اس معاملہ کی تحقیقات نیب سے کرانے کے لئے درخواست زیر سماعت ہے۔ درخواست میں کہا گیا ہے کہ پاناما لیکس کے انکشافات ایک اہم نوعیت کا معاملہ ہے،پانامالیکس میں وزیر اعظم کے خاندان کا نام آنے سے ملک کی دنیا بھرمیں بدنامی ہوئی اور قوم کے اعتماد کو ٹھیس پہنچا۔پاناما لیکس کے معاملے پر جوڈیشل کمیشن کے قیام کی حکومتی درخواست چیف جسٹس پاکستان کی جانب سے مسترد کی جا چکی ہے۔درخواست میں عدالت سے استدعا کی کہ معاملے کی حساسیت کے پیش نظر اس معاملے کی نیب میں تحقیقات کرانے کے احکامات صادر کئے جائیں تاکہ اصل حقائق قوم کے سامنے لائے جا سکیں۔

ئی معاہدہ نہیں ہوا۔ اعلامیہ کے مطابق مذاکرات ابھی کسی نتیجے پر نہیں پہنچے۔ اس کی وجہ حوثی وفد کی ہٹ دھرمی ہے۔ انہوں نے کہا کہ اس بات میں کوئی صداقت نہیں ہے کہ حکومتی وفد اور حوثی باغیوں کے درمیان مخلوط حکومت کا معاہدہ ہوا ہے۔ یہ بے بنیاد خبر حوثی باغیوں کی طرف سے پھیلائی جارہی ہے۔ حوثی اپنے غیر قانونی انقلاب کو جائز قرار دینا چاہتے ہیں۔ وہ ملک میں آئین اور دستور کو ماننے کے لئے تیار نہیں ہیں۔ ادھر اقوام متحدہ کے خصوصی نمائندے اسماعیل ولد الشیخ احمد نے کہا کہ جاری مذاکرات ایک تاریخی موقع ہے۔ یہ دوبارہ نہیں مل سکتا۔ فریقین کو چاہیے کہ وہ یمن کے امن و استحکام کو مدنظر رکھیں۔ یمنی عوام مذاکرات کی ناکامی کے متحمل نہیں ہوسکتے۔ اقوام متحدہ کی کوششوں سے رمضان سے پہلے 50 فیصد قیدیوں کی رہائی ممکن ہوگی۔ اس کے علاوہ یمنی حکومت نے جمعرات اور جمعہ کے علاوہ ’’قات‘‘ کی فروخت پر پابندی عائد کردی ہے۔ حکومتی ادارے نے اعلامیہ میں کہا کہ جمعرات اور جمعہ کے علاوہ قات کی خرید و فروخت اور نقل و حمل پر بھی پابندی ہوگی۔

یمن

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر