مردان ،نیو اڈہ کے تاجروں کی پروفیشنل ٹیکس کیخلاف شٹر ڈاؤن ہڑتال

مردان ،نیو اڈہ کے تاجروں کی پروفیشنل ٹیکس کیخلاف شٹر ڈاؤن ہڑتال

  

مردان ( بیورورپورٹ) نیواڈہ کے تاجروں نے پروفیشنل ٹیکس کے خلاف شٹرڈاؤن ہڑتال کی اور احتجاجی ریلی نکال کر ٹیکس کو مستردکردیا چارسدہ چوک ،منگل باغ چوک ،پی آرسی مارکیٹ ،بغدادہ اور نیو اڈہ کے تاجروں سینکڑوں تاجروں نے مرکزی تنظیم تاجران نویدسحر کے صدر مصطفی کمال کی قیادت میں ریلی نکالی ریلی کے شرکاء نے بنیرز اٹھارکھے تھے جن پر پروفیشنل ٹیکس کے خلاف نعرے درج تھے اس موقع پر خلیل پلازے میں احتجاجی جلسہ منعقد کیاگیا جس سے مصطفی کمال ،سلیم دولت زئی مولانا محمد علی ، حضرت منیر، صاحب زادہ ،روح اللہ عرف لالاجی نے خطاب کرتے ہوئے کہاکہ موجودہ حکومت سے عوام نے بہت توقعات وابستہ کر رکھی تھیں لیکن حکومت نے ظلم کی انہتاکرتے ہوئے 2011کے ٹیکس جرمانوں سمیت وصول کرناشروع کردیاہے جو تاجر برادری کا معاشی قتل عام ہے انہوں نے کہاکہ میونسپل کمیٹی پہلے سو پروفیشنل ٹیکس وصول کرتا تھا لیکن اب صوبائی حکومت نے ہزارگنا اضافہ کرکے تاجروں کی زندگی اجیرن کردی ہے ایکسائز عملہ ٹیکس کے حوالے تاجروں اوردکانداروں کو تنگ کررہاہے اور نوٹس پر نوٹس بجھوائے جارہے ہیں مقررین نے کہاکہ تاجر برادری پہلے سے انکم ٹیکس ، وڈہولڈنگ ٹیکس ، ٹیلی فون ،گیس اوردیگر بلوں میں قسم قسم کے ٹیکس دے رہے ہیں اس لئے تاجر برادری پروفیشنل ٹیکس کو ہر گزتیارنہیں حکومت فوری طورپر واپس لیں ورنہ احتجاج کا دائرہ وسیع کیاجائے گامقررین نے کہاکہ ٹیکس خیبرپختون خوا دہشت گردی اور انہتاپسندی کی وجہ سے تاجر برادری کے کاروبار متاثر ہوئے ہیں اس لئے مرکزی اورصوبائی حکومت ہم پر رحم کرکے ٹیکس معاف کئے جائیں اور خیبرپختون خوا کو آفت زدہ قراردیاجائے کئی گھنٹوں کے احتجاج کے بعد تاجر برداری پرامن طورپر منشتر ہوگئی ۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -