عدالت عظمیٰ کا صوبائی حلقہ 232 گگو منڈی میں دوبارہ الیکشن کرانیکا حکم

عدالت عظمیٰ کا صوبائی حلقہ 232 گگو منڈی میں دوبارہ الیکشن کرانیکا حکم

گگو منڈی، ساہوکا،( نامہ نگار+نمائندہ پاکستان ) سپریم کورٹ آ ف پاکستان نے حلقہ پی ۔پی 232گگو منڈی میں دوبارہ الیکشن کروانے کا حکم دے دیا ۔چیف جسٹس آ ف پاکستان جسٹس انور ظہیر جمالی کی سربراہی میں قائم تین رکنی بینچ نے یہ حکم رکن صوبائی اسمبلی یوسف کسیلیہ کی اپیل مسترد کرتے ہوئے سنایا ۔مئی 2013کے الیکشن میں پی ۔پی 232سے مسلم لیگ نون کے امیدوار غلام محی الدین چشتی اور آ زاد امید وار یوسف کسیلیہ کے مابین مقابلہ(بقیہ نمبر13صفحہ12پر )

ہوا اور آ زاد امیدوار یوسف کسیلیہ کامیاب ہو کر مسلم لیگ نون میں شامل ہو گئے ۔الیکشن کے بعد غلام محی الدین چشتی نے یوسف کسیلیہ کے خلاف الیکشن ٹربیونل میں عذردار ی دائر کی تھی جس میں الزام لگایا گیا تھا کہ یوسف کسیلیہ نے الیکشن رولز کی خلاف ورزی کرتے ہوئے مقررہ حد سے زائد اخراجات کیے اور اثاثہ جات چھپائے ہیں جس پر الیکشن ٹربیونل نے اس حلقہ کے الیکشن کو کالعدم قرار دیتے ہوئے دوبارہ الیکشن کروانے کا حکم دیا ۔اس فیصلہ کے خلاف یوسف کسیلیہ نے سپریم کورٹ آ ف پاکستان میں اپیل دائر کی جسے گزشتہ روز سپریم کورٹ کے تین رکنی بینچ نے مسترد کر دیا اور الیکشن ٹربیونل کے فیصلہ کو بحال رکھا ۔فیصلہ سنائے جانے کے بعد غلام محی الدین نے صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ اس فیصلہ سے سچ کا بول بالا ہوا ہے فیصلے کی خبر آ تے ہی غلام محی الدین چشتی کے حامی سابق چیر مین سٹی گگو لیاقت علی کے دفتر میں جمع ہو گئے اور ایک دوسرے کو مبارک باد دی ۔

حکم

مزید : ملتان صفحہ آخر