تمن لُنڈ کے ٹرائبل ایریاز یا پانی، بجلی، صحت اور سڑک کی سہولتوں سے محروم

تمن لُنڈ کے ٹرائبل ایریاز یا پانی، بجلی، صحت اور سڑک کی سہولتوں سے محروم

  

شادن لُنڈ(نا مہ نگا ر ) شادن لُنڈ سے مغر ب کی جا نب 20 کلو میٹر کے فا صلے پرتمن لُنڈ ٹرائیبل ایر یا میں زندہ پیر، گھو ڑے مُتر، ہفت گٹ، بستی پا ہی، بستی مر وا نی، لاک تھل، بستی سور، بستی رکا نی شا مل ہیں جو کہ کئی ہزار نفو س پر مشتمل ہیں مگر یہا ں کے با سی پا نی کی عد م دستیا بی کی وجہ سے کئی کلو میٹر کا فا صلہ طے(بقیہ نمبر47صفحہ12پر )

کر کے پا نی لا نے پر مجبور ہیں۔ بجلی کی سہو لت نہ ہو نے سے یہا ں کے با سی اب بھی اندھیرو ں میں زند گی بسر کر رہے ہیں ٹرا ئیبل ایر یا میں لو گو ں کو علاج معا لجہ کی سہو لت کے لئے ڈسپنسری تک دستا ب نہیں ایمر جنسی کی صورت میں مر یض ہسپتال پہنچنے سے قبل راستے میں دم تو ڑ جا تے ہیں پو رے علا قہ میں کہیں بھی سڑ کیں نہیں ہیں جس سے آ مدو رفت میں مکینو ں کو دقت کا سا منا رہتا ہے ایک دو پرائمری سکو ل قا ئم ہیں مگر وہ اکثر بند رہتے ہیں بچیو ں کے لئے کو ئی بھی گر لز سکول نہیں ہے۔ مکینو ں سیف اللہ، پاند ھی خان، محمد رمضان، ظفر اقبال، عمر حیا ت، فتح محمد، الٰہی بخش، محمد بلا ل، عبدالعز یز، حبیب اللہ کھو سہ، اللہ ڈتہ و دیگر نے کہا کہ ہم بھی پاکستا نی کے شہری ہیں ہما را بھی اتنا حق ہے

مزید :

ملتان صفحہ آخر -