نابینا بزرگ پنشن کیلئے دربدر، رشوت نہ دینے پررقم سے کٹوتی، اعلیٰ حکام سے اے جی آفس ملتا ن کیخلاف کارروائی کامطالبہ

نابینا بزرگ پنشن کیلئے دربدر، رشوت نہ دینے پررقم سے کٹوتی، اعلیٰ حکام سے اے ...

بستی ملوک (نمائندہ پاکستان) گورنمنٹ ہائی سکول سے ریٹائر ہونے والے نابینا ٹیچر حافظ محمد بشیر قادری نے صحافیوں کو بتایا کہ میں نیشنل بینک لاڑ سے 10851 روپے پنشن وصول کر تا (بقیہ نمبر47صفحہ7پر )

تھا نیشنل بینک کے اصرار پر میں اپنی فائل نومبر 2015میں اے جی آفس ملتان مہر عبدالغفار کو دی تو انہوں نے فائل لینے سے انکار کرتے ہوئے واپس فائل نیشنل بینک میں جمع کرانے کا کہا لیکن نیشنل بینک نے فائل دوبارہ لینے سے انکار کر دیادوبارہ فائل لیتے ہوئے مہر عندالغفار نے کہا کہ دیکھتا ہوں کہ میرے ہوتے ہوئے تم کیسے پوری پنشن لیتے ہوں اور میں نے فائل ڈائری کلرک ندیم کو جمع کر وادی اے جی آفس کے اہلکار خالدنے پانچ سو روپے رشوت طلب کی میرے انکار پربزرگی اور معذوری کی حالت میں کرپٹ اہلکاروں نے اے جی آفس کے بار بار چکر لگوائے گئے۔ اکاؤنٹ آفیسرنوید قریشی کے نوٹس لینے پر میری فائل مل گئی اور اب رشوت نہ دینے کی پاداش میں پنشن میں کٹوتی کردی گئی ہے اور جنوری 2016 سے 10851روپے کی بجائے 6800 روپے مل رہے ہیں معذوری اور بزرگی کی وجہ سے میں کوئی کام بھی نہیں کرسکتا مہنگائی کے دورمیں اس قلیل پنشن میں میرا گزر بسر نہیں ہورہا ۔

نابینا بزرگ

مزید : ملتان صفحہ آخر