سعودی عرب کی جانب سے حج کو سیاسی مقاصد کے لئے استعمال کرنے کی ایرانی کوشش کی مذمت

سعودی عرب کی جانب سے حج کو سیاسی مقاصد کے لئے استعمال کرنے کی ایرانی کوشش کی ...
سعودی عرب کی جانب سے حج کو سیاسی مقاصد کے لئے استعمال کرنے کی ایرانی کوشش کی مذمت

  

جدہ (محمد اکرم اسد/ بیورو چیف) سعودی کابینہ نے حج کو سیاسی مقاصد کے لئے استعمال کرنے کی ایرانی کوشش کی شدید مذمت کی ہے اور کہا ہے کہ ایرانی عوام کو حج جیسے مقدس فریضے سے روکنے کی تمام تر ذمہ داری ایرانی حکام پر عائد ہوتی ہے۔ وہ نہ صرف اپنے عوام کے سامنے جوابدہ ہیں بلکہ اللہ تعالیٰ کے ہاں بھی ذمہ دار ہیں۔ سعودی عرب نے کبھی کسی بھی مسلمان کو فریضہ حج یا عمرے کی ادائیگی سے نہیں روکا۔ کابینہ نے زور دیتے ہوئے کہا کہ سعودی عرب ارض مقدس پہنچنے والے تمام مسلمانوں کو یکساں طور پر سہولیات فراہم کرنا ہے۔ کسی بھی ملک کے عازمین کے ساتھ امتیازی سلوک نہیں کیا جاتا۔ جدہ میں خادم حرمین شریفین شاہ بن عبدالعزیز کی زیر صدارت کابینہ اجلاس میں کہا گیا کہ حجاج کرام خدمت سعودی عرب کا فخریہ اعزاز ہے۔ ایرانی حکام حج جیسی مقدس عبادت کو سیاست زدہ کرنے اور سیاسی اختلافات کی نظر کرنے کی کوشش کررہے ہیں۔ سعودی عرب ان مذموم کوششوں کو مسترد کرتے ہوئے زور دے کر اپنے اصولی موقف کا اعادہ کرتا ہے کہ حج مقدس عبادت ہے جسے سیاسی مقاصد کے لئے استعمال کرنے کی اجازت نہیں دی جائے گی۔ کابینہ نے اقوام متحدہ کے تحت انسداد دہشت گردی کانفرنس کے نتائج کو سراہتے ہوئے اپنے موقف کا اعادہ کیا کہ سعودی عرب ہر قسم کی دہشت گردی کی مخالفت کرتا ہے۔ سعودی عرب انسداد دہشت گردی کی مشترکہ کوشش کی حمایت کرتا رہا ہے۔ آج بھی ہر ادارے کے ساتھ تعاون کرتا ہے۔

مزید : عرب دنیا