بلدیاتی نمائندوں کے تحریک انصاف کیساتھ راباطے ، لیگی قیادت میں کھلبلی

بلدیاتی نمائندوں کے تحریک انصاف کیساتھ راباطے ، لیگی قیادت میں کھلبلی

لاہور(دیبا مرز ا سے) صوبائی دارالحکومت کے (ن) لیگی چیئرمینوں ‘ وائس چیئرمینوں اور کونسلرزنے پی ٹی آئی میں شمولیت اختیار کرنے کے لئے پی ٹی آئی کی قیادت کے ساتھ در پردہ رابطوں کا سلسلہ شروع کردیا ہے ابتدائی طور پر ان بلدیاتی نمائندوں نے پی ٹی آئی کی قیادت کے ساتھ اپنے معاملات بھی طے کر لئے ہیں ۔بلدیاتی چیئرمینوں کے ذرائع نے ’’پاکستان‘‘ کو بتایا کہ جیسے ہی 30مئی کو حکومت کی آئینی مدت پوری ہو جائے گی تواس کے بعد (ن) لیگی بلدیاتی نمائندے روزانہ کی بنیادوں پر پی ٹی آئی میں شمولیت اختیار کرنا شروع کردیں گے ۔ذرائع کا کہنا ہے کہ یہ بلدیاتی نمائندے پی ٹی آئی کے رہنما شعیب صدیقی کے ساتھ ابتدائی ملاقاتیں کررہے ہیں جو ان کے ساتھ معاملات طے کرنے کے بعدان کی ملاقات پی ٹی آئی پنجاب کے صدر عبدالعلیم خان سے ملاقات کرواتے ہیں جو ان کو فائنل کرکے ان کی ملاقات عمران خان سے کرواکر انہیں پی ٹی آئی میں باعزت طریقے سے شامل کررہے ہیں گزشتہ روز بھی لاہور کی مختلف یونین کونسلوں کے دو چیئرمینوں اور ایک سابق ٹاؤن ناظم نے عبدالعلیم کے ذریعے بنی گالا اسلام آباد میں عمران خان سے ملاقات کرکے پی ٹی آئی میں شامل ہونے کااعلان کیا ۔بلدیاتی نمائندوں کے ذرائع کا کہنا ہے کہ چونکہ اس وقت میاں نواز شریف کے بیانات کی وجہ سے مسلم لیگ کا گراف بڑی تیزی کے ساتھ نیچے آرہا ہے اور ہم گلی محلوں کی سطح پر نمائندگی رکھنے والے لوگ ہیں ہم ان کے حالیہ بنانات کی وجہ سے سخت عوامی دباؤ کا شکار ہیں عوام ہم سے ان کے بیانات کے بارے میں پوچھتے ہیں لیکن ہمارے پاس اس کا کوئی جواب نہیں ہو اس لئے ہم نے یہ فیصلہ کیا ہے کہ ہم پی ٹی آئی میں شامل ہو جائیں کیونکہ ان کی پالیسی واضح ہے ۔ دوسری جانب مسلم لیگ (ن) نے اپنے بلدیاتی نمائندوں کی پی ٹی آئی میں شامل ہونے کی اطلاعات پر ان بلدیاتی نمائندوں سے فوری طور پر رابطوں کا سلسلہ شروع کردیا ہے اور ارکان اسمبلی اور لارڈ میئرسے کہا ہے کہ وہ ان سے فوری رابطے کرکے ان کے تحفظات کو دور کریں اور اگر کسی بلدیاتی نمائندے کو لیڈر شپ سے کوئی تحفظات ہیں توان کی براہ راست ملاقات کروائی جائے تاکہ ان کے خدشات کو فوری دور کیا جا سکے ۔پارٹی قیادت نے مزید مزید کہا ہے کہ پارٹی کی اکثریت برقرار رکھنے کے لئے جس طرح کی مدد مانگی جائے گی وہ دیں گے ذرائع پر برقرار رکھا جائے۔

شمولیت،رابطے

مزید : میٹروپولیٹن 1