’’فقہ حنفیہ اور جعفریہ کا سحری کے وقت 10منٹ فرق درست نہیں‘‘

’’فقہ حنفیہ اور جعفریہ کا سحری کے وقت 10منٹ فرق درست نہیں‘‘

  



لاہور (ایجوکیشن رپورٹر ) وفاق المدارس الشیعہ پاکستان کے ترجمان نے واضح کیا ہے کہ فقہ جعفریہ اور فقہ حنفیہ کے پیروکاروں کے درمیان سحری میں دس منٹ فرق کی بات درست نہیں،احتیاط کے طور پر صرف تین چار منٹ پہلے سحری کرلی جائے، اہل تشیع کا اہل سنت سے دس منٹ کا فرق صرف افطاری کے وقت ہوتا ہے۔ میڈیا سیل کی طرف سے جاری بیان میں ترجمان نے کہا کہ کچھ عرصے سے نوٹ کیا گیا ہے کہ مختلف میڈیا ہاوسز کی طرف سے مختلف اوقات سحر وافطارشائع اور نشر کئے جارہے ہیں،جوکہ درست نہیں۔ اس حوالے جامعتہ المنتظر لاہور نے شرعی اور موسمیاتی ماہرین کی مدد سے لاہور اور مضافات کے لئے کیلنڈر تیا رکیا ہے۔ جسے ملک کے باقی علاقوں میں جغرافیائی فرق کے اعتبار سے استعمال کیا جاسکتا ہے۔ انہوں نے اخبارات کے ایڈیٹرز اور الیکٹرانک میڈیا کے ذمہ داران کی توجہ مبذول کرواتے ہوئے اپیل کی ہے کہ درست اوقات سحر و افطار کو شائع اور نشر کیا جائے۔ تاکہ عوام تک معلومات صحیح انداز سے پہنچ سکیں۔ ترجمان کا کہنا تھا کہ سحری کے اوقات میں فقہ جعفریہ اور فقہ حنفیہ میں فرق نہیں،اہل تشیع صرف احتیاط کے طور پر تین سے چار منٹ پہلے کھانا پینا بند کرتے ہیں۔جسے غلط طور پر سمجھا اور اس پر عمل کیا جارہا ہے۔ اس طرح سے روزہ دار کی حق تلفی بھی ہوتی ہے۔

مزید : میٹروپولیٹن 1


loading...