درآمدی بیجوں کی خریدوفروخت کیخلاف سپریم کورٹ میں نظر ثانی کی درخواست

درآمدی بیجوں کی خریدوفروخت کیخلاف سپریم کورٹ میں نظر ثانی کی درخواست

لاہور(نامہ نگارخصوصی)پاکستان میں امریکہ سے درآمد ہونے والے فصلوں کے زہریلے بیجوں کی خریدوفروخت اور درآمد پر پابندی عائد کرنے کے لئے سپریم کورٹ میں نظر ثانی کی درخواست دائر کر دی گئی ہے۔یہ نظر ثانی درخواست وطن پارٹی کے بیرسٹر ظفراللہ کی جانب سے دائر کی گئی ہے جس میں کہا گیا ہے کہ فصلوں کے لئے امریکہ سے دراامد کئے جانے والے بیجوں پر زہریلے کیمیکل پاکستانیوں کی صحت کی بربادی اور زرخیز زمینوں کو بنجر کرنے کا سبب بن رہی ہیں۔کیمیکل شدہ بیجوں کی دراامد کے حوالے سے قانون سازی کی عدم موجودگی کی وجہ سے کینسر کی بیماری عام ہو رہی ہے۔درخواست میں استدعا کی گئی ہے کہ عدالت امریکہ سے درآمد ہونے والے فصلوں کے زہریلے بیجوں کی خریدوفروخت اور درآمد پر پابندی عائد کرنے کے احکامات صادر کرئے، درخواست میں استدعا کی گئی ہے کہ یہ معاملہ مفاد عامہ کا ہے نظر ثانی درخواست منظور کی جائے،چیف جسٹس پاکستان کی سربراہی میں تین رکنی بنچ نے مرکزی درخواست مسترد کرتے ہوئے قرار دیا تھا کہ یہ پٹیشن مفاد عامہ کے زمرے میں نہ ہونے کے باعث قابل سماعت نہیں۔اس عدالتی فیصلے کے خلاف یہ نظرثانی کی درخواست دائر کی گئی ہے ۔

درآمدی بیج

مزید : علاقائی