مقبوضہ کشمیر ،بھارتی وزارت داخلہ کا رمضان میں جنگ بندی کا اعلان

مقبوضہ کشمیر ،بھارتی وزارت داخلہ کا رمضان میں جنگ بندی کا اعلان

سری نگر (صباح نیوز،آن لائن)بھارت کی وزارتِ داخلہ نے کہا ہے مقبوضہ کشمیر میں عسکریت پسندوں کیخلاف فوجی آپریشن کو ماہ رمضان میں معطل رکھا جائے گا تاکہ مسلمانوں کو اس مقدس مہینے کو پرامن ماحول میں گزانے کا موقعہ فراہم کیا جاسکے،تاہم حکمران جماعت بھارتیہ جنتا پارٹی نے اس کی بھرپور مخالفت کی ہے۔ تفصیلات کے مطابق وزارت داخلہ نے اپنی ایک ٹویٹ میں یہ بھی کہا وزیرِ داخلہ راجناتھ سنگھ نے ریاست کی وزیراعلیٰ محبوبہ مفتی کو فیصلے کے بارے میں مطلع کردیا ،ٹویٹ میں کہا گیا ہے بھارتی فوجی حملے کی صورت میں یا معصوم عوام کی جانوں کے تحفظ کی ضرورت پڑی تو جوابی کارروائی کا حق رکھتے ہیں۔وزیراعلیٰ نے اپنے فوری ردعمل میں کہا ہے وہ فیصلے کا دل و جان سے خیر مقدم کرتی ہیں اور بھارتی وزیرِ اعظم نریندر مودی اور وزیرِ داخلہ راجناتھ سنگھ کی طرف سے کی گئی ذاتی مداخلت کیلئے ان کا شکریہ ادا کرنا چاہتی ہیں۔ان کا واضح اشارہ حکمران جماعت بھارتیہ جنتا پارٹی بی جے پی اور بھارت کی وزیرِ دفاع نرملا سیتھا رمن کی جانب سے یکطرفہ فائر بندی کی تجویز کی مخالفت کئے جانے کی طرف تھا۔حزب اختلاف کی بھارت نواز جماعت نیشنل کانفرنس کے لیڈر اور سابق وزیر اعلی عمر عبداللہ نے بھی بھارتی حکومت کی طرف سے کئے گئے اعلان کا خیر مقدم کرتے ہوئے اپنی ایک ٹویٹ میں کہا کہ بی جے پی کو چھوڑ کر جو اس کے خلاف تھی تمام سیاسی جماعتوں کے مطالبے پر وفاقی حکومت نے یکطرفہ فائر بندی کا اعلان کردیا ۔ اب اگر عسکریت پسندوں نے اس کا باہم جواب نہیں دیا تو وہ لوگوں کے اصلی دشمن کی حیثیت سے بے نقاب ہوجائیں گے۔فائر بندی کے اعلان پر اپنے ردعمل میں علاقائی جماعت عوامی اتحاد پارٹی کے سربراہ اور ریاستی قانون ساز اسمبلی کے رکن انجینئر رشید نے کہا کہ یہ اعلان کشمیریوں کی فتح اورمسئلہ کشمیر کو پر امن طور پر حل کرنے کی طرف یہ پہلا قدم ہے۔ انہوں نے کہا کہ اس سے کشمیریوں کے اس موقف کی تائید ہوتی ہے کہ عسکریت پسند دہشت گرد نہیں ہیں۔انہوں نے مزید کہا کہ اس فیصلے سے یہ بات بھی سامنے آگئی ہے کہ نئی دہلی نے ہوش کے ناخن لینا شروع کردیا ہے کیونکہ عسکریت پسندوں کو مار کر وہ نہ صرف ان کیلئے عام لوگوں کی ہمدردیاں کے حصول کے سامان پیدا کر رہی تھی بلکہ نئے نوجوان ان کی جگہ لیکر عسکریت پسندوں کی صفوں کو مزید مضبوط کر رہے تھے۔

بھارت/اعلان

مزید : صفحہ اول