مدینہ کالونی نوشہرہ کینٹ کے عوام گندا پانی پینے پر مجبور

مدینہ کالونی نوشہرہ کینٹ کے عوام گندا پانی پینے پر مجبور

  



نوشہرہ(بیورورپورٹ) مدینہ کالونی نوشہرہ کینٹ کے عوام گندہ پانی پینے پر مجبور جس کی وجہ سے تین بچے خطرناک مرض کی وجہ سے جاں بحق ہوچکے ہیں جبکہ درجنوں بچے مختلف امراض اور ہیضے میں مبتلا ہوچکے ہیں جبکہ علاقے کے لئے آیا ہوا ترقیاتی فنڈ تحریک انصاف کے چند منظور نظرافراد ہڑپ کرچکے ہیں سوئی گیس پائپ لائن منظور نظر افراد کے گھروں کے سامنے بچھادئیے گئے ہیں اور بنے ہوئے فرش بندی کو توڑ کر علاقے کو کنڈرات میں تبدیل کردیا ہے علاقے کا ناظم اور ان کے ساتھیوں کے خلاف عوام کا شدید احتجاج تین دنوں کے اندراندر اگر ہمارے مسائل حل نہ ہوئے تو جی ٹی روڈ کو بلاک کردیں گے تفصیلات کے مطابق ویلج کونسل نمبر 6مدینہ کالونی جو کہ 700 گھرانوں پر مشتمل ہیں ابھی تک بنیادی سہولیات سے محروم ہیں اور صوبائی حکومت نے منظور نظرافراد اور ناظم کو کروڑوں روپے کا فنڈ جاری کیا لیکن وہ فنڈ انہوں نے اپنی کھیتوں اور باغات کے لئے حفاظتی دیوار اور اپنے کھیتوں میں واٹر پمپ نصب کئے اس سلسلے میں کونسلر واجد ، کونسلر عمران اور وہاں پر موجود عوام نے میڈیا کو بتایا کہ ضلع نوشہرہ کے عوام آکر دیکھ لے کہ یہ کونسی تبدیلی ہے جس میں اپنے منظور نظرافراد کو کروڑوں روپے کا فنڈ فراہم کردیاگیا اس کے باوجود عوام ، خواتین اور بچے گندہ پانی پینے پر مجبور ہیں اور ٹوٹے پوٹے پائپوں میں گندہ پانی داخل ہونے کی وجہ سے علاقے کے عوام مختلف موذی امراض میں مبتلا ہوچکے ہیں عوام اور بچوں میں ہیضہ، ہیپٹائٹس اے بی سی اور ٹائیفائیڈ جیسے خطرناک امراض کی وجہ سے تین بچے جاں بحق ہوچکے ہیں جبکہ درجنوں افراد ابھی تک مختلف امراض میں مبتلا ہوچکے ہیں اور وہ زیر علاج ہے محکمہ صحت کو چاہیے کہ وہ علاقے میں طبی سہولیات کیلئے ٹیمیں بھجوائیں تاکہ عوام کا علاج کیا جاسکے انہوں نے مزید کہا کہ تبدیلی کے نام پر کروڑوں روپے کے گھپلے ہوچکے ہیں عوام کی سہولت کیلئے کوئی کام نہیں ہوا اس کے علاوہ مدینہ کالونی سے آرمر کالونی تک سڑک بچھانے کیلئے ایک کروڑ روپے فراہم کیاتھا لیکن وہ فنڈ بھی متعلقہ ناظم نے ہڑپ کردیا انہوں نے مزید کہا کہ عوام موجودہ صوبائی حکومت سے پوچھنے میں حق بجانب ہے کہ انہوں نے عوام سے تبدیلی کے نام پر ووٹ حاصل کئے لیکن انہوں نے علاقے کو کھنڈرات کے علاوہ مسائلستان بھی بنادیا ہے صوبائی حکومت نے مسجد کیلئے فنڈ کا اعلان کیا تھا لیکن اس فنڈکا بھی ابھی تک کچھ پتہ نہیں چل سکا۔

مزید : کراچی صفحہ اول


loading...