واجبات کی عدم ادائیگی‘ آئی پی پیز نے بجلی کی پیداوار 48فیصد کم کردی

واجبات کی عدم ادائیگی‘ آئی پی پیز نے بجلی کی پیداوار 48فیصد کم کردی

ملتان (نیوز رپورٹر) رمضان المبارک میں بجلی کی فراہمی پاور سیکٹر کیلئے بڑا چیلنج بن کر رہ گیا ہے۔ انڈی پینڈنٹ پاور پروڈیوسرز (آئی پی پیز) نے واجبات اور بقایا جات کی عدم ادائیگی پر بجلی(بقیہ نمبر19صفحہ12پر )

کی پیداوار میں 48فیصد تک کمی کردی ہے۔ ادائیگیاں نہ ہونے سے آئی پی پیز کا اتنی بڑی تعداد میں نان اپریشنل ہونے کا یہ سلسلہ گزشتہ دس سال میں سب سے بڑا ہے۔ ملک میں آئی پی پیز بجلی کی فراہمی کا سب سے بڑا ذریعہ ہیں۔ ملک میں آئی پی پیز کاسٹ اپ (14683)میگاواٹ ہے اور اس وقت آئی پی پیز نے (7300) میگاواٹ سے (7500) میگاواٹ تک بجلی کی پیداوار بند کردی ہے۔ ملک میں بجلی کی پیداوار کیلئے (30195)میگاواٹ کی مشینری نصب ہے اور آئی پی پیز بجلی کی پیداوار کا سب سے بڑا ذریعہ ہے۔ حکومتی دعووں کے برعکس (1410) میگاواٹ تربیلا فورتھ‘ (1200)میگاواٹ حویلی بہادر شاہ‘ (1200) میگاواٹ بھیکی اور (1200) میگاواٹ بلوکی پاور پراجیکٹس سے بجلی کی پیداوار شروع نہیں کرسکے ہیں۔

مزید : ملتان صفحہ آخر