رمضان المبارک میں تاجر منافع خوری سے گریز کریں ،ناظم عبد اللہ

رمضان المبارک میں تاجر منافع خوری سے گریز کریں ،ناظم عبد اللہ

  



مٹہ ( رحیم خان)تحصیل ناظم مٹہ عبداللہ خان نے کہا ہے کہ رمضان المبارک میں ذمہ داروں اور افسران کیساتھ ساتھ عوام اور خاص کر دوکاندار حضرات بھی اپنے اپنے ذمہ داری پوری کرکے ناجائز منافع خوری اور پرانے چیزوں کی فروخت سے گریز کریں رینجر مٹہ علاقے کی روایات اور عوام کی جائز حقوق کو مدنظر رکھ کر اقدامات کریں میڈیکل سٹور اور ذمہ داروں کی درمیان بات چیت وقت کی ضرورت ہے کسی بھی حکم کو عملی کرنے سے پہلے زمینی حقائق کو مدنظر رکھنا چایئے ان خیالات کا اظہار انہوں نے گذشتہ روز تحصیل کونسل مٹہ کے اجلاس جو زیر صدارت سپیکر محمد حکیم منعقد ہوا سے خطاب کرتے ہوئے کیا انہوں نے کہا کہ کسی بھی قانونی اقدام پر عمل کرنے سے پہلے زمینی حقائق کو مدنظر رکھ کر کام کرنا چایئے کیونکہ بعض کاموں سے عوام میں تشویش پیدا ہوتی ہیں انہوں نے اس وقت رینجر مٹہ کے گھروں کی جلانے کیلئے لکڑیوں پر پابندی کو ایک غیر مناسب اقدام قرار دیا انہوں نے واپڈا پر بھی کڑی تنقید کی اپوزیشن لیڈر صلاح الدین خان نے کہا کہ کونسل اجلاس میں سرکاری افسران کے شرکت کو یقینی بنانے کیلئے کونسل کی ذمہ دار کردار ادا کریں انہوں نے کہا کہ رینجر مٹہ اس وقت ان لکڑیوں کی خلاف بھی کام کرتے ہیں جو لوگوں کی پاس قانونی طور پر گھروں میں موجود ہے انہوں نے حکومت سے پرزور مطالبہ کیا کہ وہ میڈیکل سٹور اور حکومت کے درمیان پیدا ہونے والے خطرناک صورتحال میں کردار ادا کریں عادل خان ایڈوکیٹ نے کہا کہ ذمہ دار احکام رمضان المبار ک میں اشیاء خوردونوش کی معیار سمیت قیمتوں اور مٹہ بازار میں ٹریفک کو رواں دواں رکھنے کیلئے اقدامات کریں انہوں نے بھی گھروں میں جلانے والی لکڑیوں پر پابندی ختم کرنے کا مطالبہ کیا اجلاس سے خورشید علی خان سپیکر محمد حکیم ٹی ایم او یاسر محمد جاوید علی فضل ربی خان گوہر علی اور دیگر نے بھی خطاب کی اجلاس میں فضل ربی خان نے کونسل میں گھروں میں جلانے والی لکڑیوں پر پابندی ختم کرنے کیلئے قراداد پیش کی جو متفقہ طور پر منظور کیا گیا اجلاس میں واپڈاکی بارے میں اور میڈیکل سٹوروں کی موجودہ صورتحال کو جلد از جلد ختم کرنے کیلئے بھی قرارداد منظور کی گئی اجلاس میں سب سے زیادہ بحث رینجر مٹہ کی رویہ کی خلاف کی گئی جبکہ میڈیکل سٹور والوں کی جاری ہڑتال کو ایک خطرناک کام قرار دیکر حکومت سے فوری اقدامات اٹھانے کا بھی مشترکہ مطالبہ کیا گیا

مزید : پشاورصفحہ آخر


loading...