صوبائی اسمبلی اور امن چوک کی چیک پوسٹیں ختم ،پولیس کے حوالے

صوبائی اسمبلی اور امن چوک کی چیک پوسٹیں ختم ،پولیس کے حوالے

پشاور(کرائم رپورٹر) امن و امان کی بہتر ہوتی صورتحال کو مد نظر رکھتے ہوئے صوبائی اسمبلی اور امن چوک میں پاک آرمی کی چیک پوسٹیں ختم کرتے ہوئے انہیں پشاورپولیس کے حوالے کردیا گیا۔کیپیٹل سٹی پولیس کے جوانوں نے چیک پوسٹوں کا چارج سنبھالتے ہوئے چیکنگ کا عمل شروع کردیا ۔ جوانوں کو ناکہ پر عوام الناس کی عزت نفس کا بھر پور خیال رکھنے کی ہدایت۔عوام سے بھی ناکہ پر موجود جوانوں کے ساتھ بھر پور تعاون کی اپیل کی ہیں۔تفصیلات کے مطابق صوبائی دارلحکومت پشاور میں امن و امان کی بہتر ہوتی صورتحال کو دیکھتے ہوئے صوبائی اسمبلی کے سامنے اور امن چوک پر واقع آرمی چیک پوسٹیں ختم کردی گئی جبکہ انہیں پشاور پولیس کے حوالے کر دیا گیا۔چیک پوسٹوں کا چارج سنبھالنے پر ایس ایس پی آپریشن جاوید اقبال نے چیک پوسٹ پر تعینات ہونے والے جوانوں کو خصوصی ہدایات دیتے ہوئے کہا کہ تمام جوان پہلے سلام پھر کلا م کی پالیسی پر عمل کریں۔ انہوں نے کہا کہ اپنی ڈیوٹی جانفشانی اور ایمانداری سے سر انجام دے کر ہی عوام الناس کوناکہ بندیوں کے ثمرات مل سکیں گے۔ایس ایس پی نے جوانوں پر واضح کیا کہ ہمہ وقت چوکس اور مستعد رہتے ہوئے شرپسندوں کو اپنے مذموم مقاصد میں کامیاب ہونے سے روکا جا سکتا ہے ۔ اس موقع پر موجود ایس پی سیکیورٹی صاحبزادہ سجا د نے ناکہ بندیوں کے کینٹ میں واقع ہونے کے ساتھ ساتھ ان کی افادیت و اہمیت سے جوانوں کو آگاہ کیا جبکہ میڈیا کے ذریعے عوام سے بھی اپیل کی کہ عوام بھی چیک پوسٹوں پر موجود پولیس جوانوں کے ساتھ تعاون کریں۔

مزید : پشاورصفحہ آخر