گولن گول پاور پراجیکٹ چترال کے ہائی ٹرانسمیشن لائن پر پولوں کی تنصیب روک دی گئی

گولن گول پاور پراجیکٹ چترال کے ہائی ٹرانسمیشن لائن پر پولوں کی تنصیب روک دی ...

پشاور(نیوزرپورٹر)پشاورہائی کورٹ کے جسٹس محمد ابراہیم خان اور جسٹس ارشد علی پرمشتمل دورکنی بنچ نے گولن گول پاؤرپراجیکٹ چترال کے ہائی پاؤرٹرانسمشن لائن کے لئے نجی اراضی پرپولوں کی تنصیب روک دی اورپراجیکٹ ڈائریکٹرٗ ڈی سی دیرپائین اورڈائر یکٹرجنرل ادارہ تحفظ ماحولیات سے جواب مانگ لیاہے عدالت عالیہ کے فاضل بنچ نے یہ عبوری احکامات گذشتہ روز درخواست گذار محمد عمران خان ساکن تیندوڈاک ادینزئی ضلع دیرپائین کی جانب سے دائررٹ پرجاری کئے اس موقع پران کے وکیل ملک اجمل خان نے عدالت کو بتایاکہ گولن گول ہائیڈرل پاؤرپراجیکٹ سے بجلی کی سپلائی کے لئے 132کے وی ہائی پاؤرٹرانسمشن لائن کے لئے پولوں کی تنصیب کاعمل جاری ہے اوردرخواست گذار کی نہ صرف اراضی بلکہ گھر کے صحن میں بھی پول نصب کئے جارہے ہیں تاہم اس مقصد کے لئے اراضی کے حصول کے لئے نہ ہی قانونی ضابطے پورے کئے گئے نہ ہی اراضی کاایوارڈ ہوا اورنہ ہی کسی قسم کامالی معاوضہ ادا کیاجارہا ہے اوراس طرح متعلقہ حکام زبردستی ان کی ذاتی ملکیتی اراضی اورگھرمیں پول نصب کررہے ہیں جس کے باعث ماحولیاتی آلودگی بھی بڑھے گی لہذااس اقدام کو کالعدم قرار دیا جائے عدالت عالیہ کے فاضل بنچ نے ڈائریکٹرجنرل ادارہ تحفظ ماحولیات ٗ ڈی سی دیرپائین اورپراجیکٹ ڈائریکٹرگولن گول پاؤرپراجیکٹ سے جواب مانگ لیانجی اراضی پرہائی پاورٹرانسمشن لائن کی تنصیب سے روک دیا۔

مزید : پشاورصفحہ آخر