خطے کی محرومیوں کے خاتمے‘ صوبے کے قیام کو مشن بناکر استعفے دیئے‘ قاسم نون

خطے کی محرومیوں کے خاتمے‘ صوبے کے قیام کو مشن بناکر استعفے دیئے‘ قاسم نون

جلال پور پیر والہ (نامہ نگار) جنوبی پنجاب صوبہ محاذ کے نائب صدر اور چند ہفتے قبل مستعفی ہونیوالے ایم این اے رانا قاسم نون اور حال ہی میں تحریک انصاف میں شامل ہونیوالے ملک(بقیہ نمبر31صفحہ12پر )

اکرم کنہوں نے بدھ کی شام میونسپل کمیٹی میں منعقدہ مشترکہ پریس کانفرنس میں کہا کہ تحریک انصاف کے پلیٹ فارم سے جنوبی پنجاب کو نیا صوبہ بنانے اور علاقے کے مسائل حل کرنے کی جدوجہد کریں گے۔ رانا قاسم نون نے کہا کہ جنوبی پنجاب صوبہ محاذ بنانے والے اراکین اسمبلی نے خطے کی محرومیوں کے خاتمے کیلئے نئے صوبے کے قیام کو ایک مِشن بناکر استعفے دئیے۔ ہمارے اعلیٰ تعلیمیافتہ لوگ کراچی میں محنت مزدوری کرنے پر مجبور ہیں کیونکہ اعلیٰ ملازمتوں پر ان کی بجائے شمالی پنجاب کے افراد کو تعینات کیا جاتا ہے۔ ن لیگی قیادت اس خطے کو اپنا مفتوحہ علاقہ سمجھتی ہے لیگی قیادت تک عوامی محرومیوں کی بات پہنچانے کی کوشش کی لیکن کوئی شنوائی نہیں ہوئی، چھوٹے یونٹ بنانے سے فیڈریشن مضبوط ہو گی پی ٹی آئی میں شمولیت کے حوالے سے سوال کے جواب میں رانا قاسم نون نے کہا کہ پی ٹی آئی کی قیادت نے جنوبی پنجاب صوبے سے اتفاق کرتے ہوئے ہمارے ساتھ تحریری وعدہ کیا کہ 100 دن میں نیا صوبہ بنایا جائے گا جس پر یقین کرتے ہوئے تحریک انصاف میں شامل ہوئے ہیں اس وعدے کی تکمیل سے تحریک انصاف کو بھی تقویت ملے گی، رانا قاسم نون نے ممبئی حملوں سے متعلق نواز شریف کے بیان پر تنقید کرتے ہوئے کہا کہ غلط بیان دینے کے بعد نواز شریف کی ڈھٹائی قابل مذمت ہے۔ ملک اکرم کنہوں نے پریس کانفرنس میں کہا کہ میں پیپلز پارٹی کا ضلعی صدر رہا ہوں مجھے اب بھی پی پی کی قیادت سے کوئی گلہ یا شکایت نہیں ہے حال ہی میں رانا قاسم نون سے ملاقاتوں کے دوران علاقائی ایشوز زیر بحث آئے جس میں ہم اس بات پر متفق ہوئے کہ ہمارا سب سے بڑا مسلہ علیحدہ صوبے کا نہ بننا ہے علیحدہ صوبے کے حصول کی خاطر ایک ہی پلیٹ فارم سے جدوجہد کرنے پر اتفاق رائے ہوا۔پریس کانفرنس کے موقع پرمیاں احمد رضا بودلہ، حاجی محمد اسلم، سجاد خان بلوچ ایڈووکیٹ، حافظ بشیر رُک، رانا رمضان جکھڑ، میاں خضر بودلہ، ملک اعجازسمیت نون گروپ اور کنہوں گروپ کے کارکنوں کی کثیر تعداد موجود تھی۔

مزید : ملتان صفحہ آخر