امانت مانگنا جرم بن گیا، بدبخت بیٹے کا ماں کے منہ میں پتھر ڈال کر بدترین تشدد

امانت مانگنا جرم بن گیا، بدبخت بیٹے کا ماں کے منہ میں پتھر ڈال کر بدترین تشدد
امانت مانگنا جرم بن گیا، بدبخت بیٹے کا ماں کے منہ میں پتھر ڈال کر بدترین تشدد

  

چنیوٹ (ویب ڈیسک) اپنی ہی کوکھ سے جنم دے کر جانی دشمن بنا ڈالا، سگی ماں کو بیوی کے ساتھ مل کر شدید تشدد کا نشانہ بنا ڈالا۔

یوٹیوب چینل سبسکرائب کرنے کیلئے یہاں کلک کریں

روزنامہ خبریں کے مطابق چنیوٹ تھانہ سٹی کے علاقے محلہ خان شاہ بخاری کی رہائشی صفیہ بی بی نے اڑھائی تولے سونا اپنی بہو فاطمہ اور بیٹے خرم کو بطور امانت دے رکھی تھی اور واپسی مانگنے پر انکاری ہوگئے لیکن سونا کسی کی امانت تھا جس کے لئے والدہ نے دوبارہ کہا جس پر سگے بیٹے اور بہو نے صفیہ بی بی پر ٹوٹ پڑے اور  شدید تشدد کیا جس کی وجہ سے فاطمہ بی بی کے پورے جسم پر تشدد کے نشانات تھے اور منہ میں پتھر ڈال کر مارتے رہے کہ زبان کو بند کردے اور سونے کا مطالبہ نہ کرے جس پر بہو بیٹے نے ظلم کی انتہا کردی اور شدید زخمی حالت میں ہمسایوں نے ریسکیو کو بلا کر ہسپتال منتقل کروایا جبکہ صفیہ بی بی کا کہنا تھا کہ میرا بیٹا اور بہو فاطمہ میری جان کی دشمن بن گئی ہے۔

صفیہ بی بی نے بتایا کہ ان کے پاس میں نے سونا رکھوایا تھا اور واپسی مانگنے پر انہوں نے مجھ پر شدید کیا، کمرہ میں بند کئے رکھا جبکہ شور شرابا پر دوسری بہو آئی اور ہمسایوں کی مدد سے ہسپتال پہنچایا جبکہ میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے اعلیٰ افسران سے انصاف کی اپیل کی ہے۔

مزید : علاقائی /پنجاب /چنیوٹ