قانون میں چیئر مین نیب کو ہٹانے کا واضح طریقہ کار موجود نہیں ، ماہرین

قانون میں چیئر مین نیب کو ہٹانے کا واضح طریقہ کار موجود نہیں ، ماہرین
قانون میں چیئر مین نیب کو ہٹانے کا واضح طریقہ کار موجود نہیں ، ماہرین

  



اسلام آباد (ویب ڈیسک) چیئر مین نیب کی تعیناتی کیلئے تو قانون واضح رہنمائی فراہم کرتا ہے تاہم قانونی ماہرین کے نزدیک ا نہیں ہٹانے کیلئے کوئی واضح طریقہ کار موجود نہیں ہے۔ مسلم لیگ ن کے حامی چیئر مین نیب جسٹس (ر) جاوید اقبال کو ہٹانے کا مطالبہ کر رہے ہیں تاہم وکلاءکاکہنا ہے کہ چیئر مین نیب کو ہٹانے کے حوالے سے قانون میں ابہام ہے ۔ نیت آرڈیننس کی شق 6کے مطابق چیئر مین نیب کو صرف انہی وجوہات کی بناءپر عہدے سے ہٹایا جاتا ہے جو سپریم کورٹ کے جج کو ہٹانے کیلئے ہوتی ہے۔ وکلاءکے نزدیک کسی جج کو مس کنڈکٹ کی بنیاد پر سپریم کورٹ جوڈیشنل کونسل کارروائی کرتے ہوئے عہدے سے ہٹاسکتی ہے تاہم قانون میں چیئر مین نیب کو ہٹانے کیلئے کوئی طریقہ کار نہیں دیا گیا اور نہ یہ بتایا گیا ہے کہ چیئر مین نیب کو ہٹانے کا فورم سپریم جوڈیشنل کونسل ہے۔

مزید : علاقائی /اسلام آباد


loading...