ن لیگ کے کن کن رہنماﺅں نے پارلیمانی پارٹی کے اجلاس کے دوران شہبازشریف کے سامنے نوازشریف کے ممبئی حملوں سے متعلق بیان کو نامناسب قرار دیا ؟ جان کر نواز شریف کیلئے بھی یقین کرنا مشکل ہو جائے گا

ن لیگ کے کن کن رہنماﺅں نے پارلیمانی پارٹی کے اجلاس کے دوران شہبازشریف کے ...
ن لیگ کے کن کن رہنماﺅں نے پارلیمانی پارٹی کے اجلاس کے دوران شہبازشریف کے سامنے نوازشریف کے ممبئی حملوں سے متعلق بیان کو نامناسب قرار دیا ؟ جان کر نواز شریف کیلئے بھی یقین کرنا مشکل ہو جائے گا

  



لاہور (ڈیلی پاکستان آن لائن )مسلم لیگ ن کے صدر میاں شہبازشریف کی زیر صدارت اسلام آباد میں  پارلیمانی پارٹی کا اجلاس ہوا جس میں 100 سے زائد اراکین پارلیمنٹ نے شرکت کی جبکہ اجلاس میں  پانچ اراکین کے علاوہ تمام ارکین نے نوازشریف کے ممبئی حملوں سے متعلق بیان کی تائید و حمایت کی ۔

نجی ٹی وی ’’ جیونیوز‘‘  نے اپنے ذرائع کے حوالے سے کہاہے کہ  اجلاس کے دوران چار سے پانچ اراکین قومی اسمبلی کے علاوہ تمام ارکان نے نواز شریف کے بیان کی مکمل تائید و حمایت کی جب کہ نواز شریف کے بیان کی تائید نہ کرنے والے اراکین نے ممبئی حملوں سے متعلق بیان کو نامناسب قرار دیا، نواز شریف کے بیان کی مخالفت کرنے والے اراکین میں عاشق گوپانگ، شیخ فیاض الدین، عبدالرحمان کانجو اور شفقت بلوچ شامل ہیں۔اراکین قومی اسمبلی نے کہا کہ نواز شریف کے بیان سے پارٹی کو نقصان پہنچا اور اس بیان سے قبل ختم نبوت والے معاملے نے بھی پارٹی کو نقصان پہنچایا۔

ذرائع کے مطابق اراکین کا کہنا تھا کہ نواز شریف کے بیان کے بعد پہلے کی طرح ماحول سازگار نہیں رہا، الیکشن مہم میں بھی مشکلات کا سامنا کرنا پڑ سکتا ہے جس پر وزیر اعلیٰ پنجاب شہباز شریف کا کہنا تھا کہ اراکین کے تحفظات نواز شریف کے سامنے رکھیں گے، (ن) لیگ کی کارکردگی ہی سب سے بڑا دفاع ہے اور آئندہ انتخابات میں کارکردگی کی بنیاد پر الیکشن لڑیں گے۔

مزید : قومی


loading...