دوران پرواز افطار کا وقت کس طرح طے کیا جانا چاہیے، افطاری سے پہلے کس بات کا اطمینان کرلینا چاہیے؟ متحدہ عرب امارات کے گرینڈ مفتی نے بڑی مشکل کا حل بتادیا

دوران پرواز افطار کا وقت کس طرح طے کیا جانا چاہیے، افطاری سے پہلے کس بات کا ...
دوران پرواز افطار کا وقت کس طرح طے کیا جانا چاہیے، افطاری سے پہلے کس بات کا اطمینان کرلینا چاہیے؟ متحدہ عرب امارات کے گرینڈ مفتی نے بڑی مشکل کا حل بتادیا

  

دبئی سٹی (مانیٹرنگ ڈیسک) فضائی سفر نے ہماری زندگی کو بالکل بدل کر رکھ دیا ہے۔ آج کے جدید دور میں یہ عام بات ہے کہ آپ روزہ زمین پر رکھیں لیکن بوقت افطار ہزاروں فٹ کی بلندی پر محو پرواز ہوں۔ تو ایسی صورت میں افطار کا درست وقت کس طرح طے کیا جائے؟

نیوز سائٹ ایمریٹس 247 نے یہی سوال دبئی کے گرینڈ مفتی ڈاکٹر علی احمد مشائل کے سامنے رکھا تو ان کا کہنا تھا کہ افطار کے لئے اس جگہ کے وقت پر انحصار کیا جائے گا جہاں آپ جسمانی طور پر موجود ہیں، یعنی دوران پرواز افطار کے لئے آپ اس جگہ کے وقت کے مطابق افطار نہیں کریں گے جہاں آپ نے روزہ رکھا تھا۔ ان کا کہنا تھا کہ اگر آپ ہوائی جہاز میں سفر کررہے ہیں تو فضائی عملے سے معلوم کریں کہ سورج غروب ہو چکا یا نہیں، اور غروب آفتاب کا اطمینان کر لینے کے بعد ہی افطار کریں۔ اگر آپ کو بتایا جاتا ہے کہ سورج غروب ہوچکا ہے تو آپ روزہ افطار کرسکتے ہیں۔

کیا روزے کی حالت میں بلڈ ٹیسٹ کیلئے خون دیا جاسکتا ہے؟ عرب دنیا کے معروف عالم دین نے انتہائی حیران کن فتویٰ دے دیا

اگر آپ کا ہوائی سفر اس نوعیت کا ہے کہ آپ مختلف ٹائم زونز میں 24 گھنٹوں کے دوران بھی سورج کو غروب ہوتا نہیں دیکھ سکتے تو اس صورت میں روزے کے اوسط دورانیے کا حساب لگائیں اور اس کے مطابق افطار کریں، یا مکہ کے وقت افطار ، اور یا اپنی قریب ترین جگہ پر غروب آفتاب کے وقت کے مطابق افطارکریں۔

مزید : Ramadan Page /Ramadan News