ڈیپارٹمنٹل سٹورز پر اشیاء کی مہنگے داموں فروخت، امراء کو ہر چیر میسر، غریب پریشان 

ڈیپارٹمنٹل سٹورز پر اشیاء کی مہنگے داموں فروخت، امراء کو ہر چیر میسر، غریب ...

لاہور (سٹی رپورٹر) رمضان المبارک کے دوران شہر بھر کے بڑے ڈیپارٹمنٹل سٹورز پر خریداروں کا رش،جہاں ضروریات زندگی کی تمام اشیاء موجود ہیں،جبکہ حالیہ مہنگائی کے سبب غریب طبقہ شدید پریشانی کا شکار ہے اور انہیں زندگی کی بنیادی سہولیات تک میسر نہیں ہیں۔ اس حوالے سے روزنامہ پاکستان کی جانب سے کیے گئے سروے کی مطابق ماہ صیام کے مہینے میں شہر بھر میں موجود بڑے اور نجی ڈیپارٹمنٹل سٹورز پر امیروں کا رش ہے۔ جہاں انہیں ضروریات زندگی کی تمام سہولیات با آسانی میسر ہیں جبکہ دوسری جانب ملک کا غریب طبقہ جو مہنگائی کے ہاتھوں پریشان ہے اور رمضان المبارک کے مہینے میں بھی انہیں کوئی ریلیف حاصل نہیں ہے جس کے سبب انہیں شدید مشکلات کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے۔روزنامہ ”پاکستان“ کے نمائندہ سے گفتگو کرتے ہوئے علی رضا، ا یازاحمد، محمد حسن اور وقاص امتیاز سمیت دیگر شہریوں کا کہنا تھا کہ ہمیں امید تھی کہ موجودہ حکومت یہ امیر و غریب کا طبقاتی فرق ختم کرے گی لیکن ایسا ہوتا نظر نہیں آتا۔بڑے بڑے ڈیپارٹمنٹل سٹورز پرتمام اشیاء میسر ہیں لیکن مہنگے داموں،جنہیں غریب عوام خریدنے کا سوچ بھی نہیں سکتے اور غریبوں کیلئے لگائے گئے رمضان بازاروں پر لمبی لمبی قطاریں ہیں اور ایک کلو سے زائد اشیاء بھی فراہم نہیں کی جارہیں اس کے علاوہ یوٹیلٹی اسٹورز پر سبسڈی تو دی گئی مگر وہاں تو اشیاء خورونوش موجود ہی نہیں ہیں۔رمضان میں حکومتی ریلیف کے دعوے بھی محض نعروں تک محدود رہے ہیں اور اس حوالے سے کوئی عملی حکمت نظر نہیں آئی۔ ملک کی تر قی کیلئے ضروری ہے کہ تمام طبقات کو ایک پلیٹ فارم پر لایا جائے اور اس کیلئے حکومت سمیت ہر عام شہری کو اپنا کردار ادا کرنا ہو گا۔

ڈیپارٹمنٹل سٹورز

مزید : صفحہ اول