ٹیکس ایمنسٹی اسکیم کے اجراء سے ٹیکس نیٹ بڑھے گا،زاہد بخاری

ٹیکس ایمنسٹی اسکیم کے اجراء سے ٹیکس نیٹ بڑھے گا،زاہد بخاری

لاہور(نیوز رپورٹر)پاکستان انٹرپرنیورزفورم کے سینئر راہنما و سیکرٹری اطلاعات زاہد بخاری وفاقی کابینہ کی طرف سے اندرون و بیرون ملک غیر ظاہر شدہ اثاثوں کو ڈکلیئر کرنے کیلئے ٹیکس ایمنسٹی اسکیم کی منظور کے بعد صدر مملکت کی جانب س آرڈینسنس کے اجراء کو خوش آئند قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ ٹیکس ایمنسٹی سکیم کے اجراء سے ٹیکس نیٹ میں اضافہ اور حکومت معاشی طور پر مستحکم ہوگی۔ ان خیالات کااظہار انہوں نے صنعتکاروں کے وفد سے گفتگو کرتے ہوئے کیا۔سیکرٹری اطلاعات زاہد بخاری نے کہا کہ ٹیکس ایمنسٹی سکیم کا مقصد ریونیو اکٹھا کرنے نہیں بلکہ اثاثوں کو معیشت میں شامل کرکے انہیں فعال کرنا ہے۔انہوں نے کہا کہ حکومت ٹیکس ایمنسٹی سکیم کو آسان بنائے تاکہ زیادہ سے زیادہ لوگ اس سکیم سے فائدہ اٹھاسکیں اثاثے ظاہر کرنے کی سکیم سے ٹیکس گزاروں کو سہولت اور معیشت کو دستاویزی شکل کو فروغ ملے گا۔ اثاثہ جات ڈکلیئریشن سکیم کو عام فہم اور بآسانی نافذ العمل کرنے سے زیادہ سے زیادہ لوگ اس سکیم سے استفادہ حاصل کریں گے اور یہ سکیم کامیابی سے ہمکنار ہوگی۔اس سکیم سے ٹیکس نیٹ اور وائیٹ اکنامی میں اضافہ سے ملک معاشی استحکام کی طرف گامزن ہوگا۔ نئی ٹیکس ایمنسٹی سکیم کا اجراء سے پاکستانیوں کے اثاثوں کی ڈکلیریشن سے ٹیکس آمدن میں اضافہ ہوگا اور حکومتی ریونیو میں اضافہ سے ملک معاشی طور پر مستحکم ہونے سے ملک کو بیرونی اداروں کو ان کی شرائط پر قرضے حاصل کرنے سے نجات مل جائے گی۔

مزید : کامرس