صنعتی شعبے کی سالانہ پیداواری رپورٹ جاری ‘ ِ بڑے پیمانے پر پیداوار کی شرح میں 10.63فیصد کمی ریکارڈ

صنعتی شعبے کی سالانہ پیداواری رپورٹ جاری ‘ ِ بڑے پیمانے پر پیداوار کی شرح ...

ملتان (نیوز رپورٹر) ادارہ شماریات نے ملکی صنعتی شعبے کی سالانہ پیداواری رپورٹ (بقیہ نمبر29صفحہ12پر )

جاری کردی جس کے مطابق گزشتہ برس مارچ کے مقابلے میں رواں سال بڑے پیمانے پر پیداوار (لارج اسکیل مینوفیکچرنگ)کی شرح میں 10.63 فیصد کمی آئی۔ادارہ برائے شماریات کی رپورٹ کے مطابق خوراک اور مشروبات، کھاد، پیٹرولیم مصنوعات اور آٹو موبائلز کی ناقص کارکردگی کی وجہ سے صنعتی شعبے میں بڑے پیمانے پر پیداوار میں کمی کے خدشات میں اضافہ ہوگیا ہے۔سال ہہ سال کی بنیاد پر جاری کیے اعداد و شمار کے مطابق رواں مالی سال کے ابتدائی 9 ماہ میں (جولائی تا مارچ) ایل ایس میں 2.93 فیصد کمی آئی جو مالی سال 19-2018 میں پیداوار کے طے شدہ ہدف 8.1 فیصد سے بہت کم اور منفی شرح ترقی ہے۔آئل کمپنیز ایڈوائزری کمیٹی کی 11 اشیا کے پیداواری اعداد و شمار میں 9.65 منفی اضافہ ہوا، وزارت صنعت اور پیداوار کی 36 اشیا میں 11.90 فیصد اور صوبائی ادارہ شماریات کی 65 اشیا کی پیداوار میں 7.39 فیصد کمی ہوئی۔صنعتی شعبے میں مالی سال 19-2018 میں 7.6 فیصد اضافے کا ہدف طے کیا گیا ہے جس میں بڑے پیمانے پر پیداوار میں 8.1 فیصد، چھوٹے پیمانے پر گھروں میں پیداوار میں 8.2 فیصد، تعمیرات 10 فیصد، بجلی کی پیداوار اور تقسیم، گیس کی فراہمی میں 7.5 فیصد اضافے سے مینوفیکچرنگ سیکٹر میں 7.8 فیصد توسیع کی جائےگی تاہم کارکردگی سے ظاہر ہوتا ہے کہ مالی سال کے ابتدائی 9 ماہ میں ترقی کے منفی رجحان کی وجہ سے معیشت مزید سست روی کا شکار ہوجائے گی۔

کمی

مزید : ملتان صفحہ آخر