غیر قانونی بھرتیاں منسوخ کی جائیں ،علامہ باقر حیدری

غیر قانونی بھرتیاں منسوخ کی جائیں ،علامہ باقر حیدری

پاراچنار(نمائندہ پاکستان)ضلع کرم کے علماءاور مختلف تنظیموں کے رہنما¶ں نے سول جج کے دفتر کیلئے بھرتیوں میں بے قاعدگیوں پر شدید احتجاج کرتے غیر قانونی بھرتیوں کو منسوخ کرنے کا مطالبہ کیا ہے اور انصاف نہ ملنے کی صورت میں اعلی عدالتوں سے رجوع کرنے کا فیصلہ کیا ہے پاراچنار میں مشترکہ پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے علماءکونسل کے رہنما علامہ باقر حیدری، مجلس علماءکے رہنما علامہ ثواب علی، ایم ڈبلیو ایم کے رہنما آغا مزمل حسین، سماجی رہنما احمد حسین اور محمود جان نے کہا کہ ضلع کرم کے لئے سول جج اور سیشن جج کی عدالتوں کے لیے بھرتیوں میں غیر سنجیدگی کا مظاہرہ کیا گیا ہے امیدواروں کو عدالتی اہلکاروں نے ٹیسٹ اور انٹرویو کے غلط تاریخ بتائے جس کی وجہ سے اہل امیدواروں کو ٹیسٹ اور انٹرویو سے محروم رکھا گیا جس میں ایک درجن سے زائد ایم فل امیدوار بھی شامل ہیں اور جن امیدواروں نے ٹیسٹ اور انٹرویو میں حصہ لیا ہے اس میں بھی اپنے من پسند لوگوں کو بھرتی کیا گیا اور میرٹ کو یکسر نظر انداز کیا گیا رہنماوں نے کہا کہ اگر انہیں اپنا حق میں دیا گیا اور غیر قانونی بھرتی منسوخ نہ کی گئی تو وہ اعلی عدالتوں سے اس نا انصافی کے خلاف رجوع کریں گے

مزید : پشاورصفحہ آخر